The news is by your side.

Advertisement

امجد صابری کا قتل، تحقیقات کیلئے ڈی آئی جی ویسٹ کی سربراہی میں کمیٹی قائم

کراچی : امجد صابری کے قتل کی تحقیقات کیلیے ڈی آئی جی ویسٹ کی سربراہی میں کمیٹی بنادی گئی ہے، آئی جی سندھ کا کہنا ہے کہ کے قتل کی تفتیش کا رخ ابھی متعین نہیں، اس واردات کا تمام زاویوں سے جائزہ لیا جا رہا ہے جبکہ امجد صابری کے قتل کی ایف آئی آر درج کرلی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق معروف قوال امجد صابری کے قاتلوں کی تلاش کیلئے قانون نافذ کرنے والے ادارے سرگرم ہے لیکن اب تک قاتلوں کا سراغ نہ لگ سکا۔ قتل کی تحقیقات کیلئے ڈی آئی جی ویسٹ کی سربراہی میں کمیٹی بھی تشکیل دی گئی، جس میں سینیئر رینک کے افسران شامل ہیں۔

قانون نافذ کرنے والے اداروں نے امجد صابری کو نشانہ بنانے سے پہلے کی سی سی ٹی وی فوٹیج حاصل کرلی ہے، لیاقت آباد دس نمبر پُل کے نیچے ملزمان کو امجد صابری کی گاڑی کا پیچھا کرتے دیکھا جا سکتا ہے۔

دوسری جانب امجد صابری کے قتل کی ایف آئی آر شریف آباد تھانے میں بھائی کی مدعیت میں درج کر لی گئی ہے، مقدمے میں دہشت گردی کی دفعات شامل ہیں۔

عینی شاہدین کی مدد سے امجد صابری پر گولیاں برسانے والے ملزم کا خاکہ تیار کیا گیا ہے جبکہ سندھ حکومت نے ملزمان کی نشاندہی کرنے والوں کیلئے ایک کروڑ روپے انعام کا اعلان کیا ہے، آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ نے ان اطلاعات کی سختی سے تردید کی کہ امجد صابری کی جان کو خطرہ تھا اور پولیس نے کچھ نہیں کیا۔ انکا مزید کہنا تھا کہ واردات کا تمام زاویوں سے جائزہ لے رہے ہیں، کسی بھی اہم معاملے کی تحقیقات میں اتنی جلدی کسی حتمی نتیجے پر نہیں پہنچا جاسکتا۔

یاد رہے کہ کراچی کے علاقے لیاقت آباد نمبر دس پر موٹرسائیکل سوار دہشت گردوں نے امجد صابری کو ٹارگٹ کرکے قتل کردیا تھا، امجد صابری کو چھ گولیاں لگی تھیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں