The news is by your side.

Advertisement

خیبرپختونخوا میں ایک اور بچی جنسی درندگی کی بھینٹ چڑھ گئی

پشاور: خیبرپختونخوا میں کمسن بچی سے زیادتی کا ایک اور واقعہ سامنے آگیا، معصوم بچی کو جنسی ہوس کا نشانہ بنانے والے کو گرفتار کر لیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق خیبرپختونخوا میں بچوں سے زیادتی کے واقعات کا سلسلہ دراز ہوگیا، معصوم بچیوں کے جنسی درندوں کی بھینٹ چڑھنے کا سلسلہ تھم نہ سکا۔

پشاور کے بعد نوشہرہ میں بھی جنسی درندہ مکروہ فعل کرتے ہوئے پکڑا گیا، واقعہ اکبر پورہ کے علاقے میں پیش آیا، والدین کا کہنا ہے کہ چار سال کی ماہ نور کو دکان پر بھیجا مگر وہ واپس نہیں آئی، ڈھونڈنے پر ایک شخص بچی سے زیادتی کرتے ہوئے پکڑا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: نوشہرہ، 7 سال کی بچی زیادتی کے بعد قتل

والدین کے مطابق واقعے کی فوری اطلاع پولیس کو دی جس پر کارروائی کرتے ہوئے پولیس نے ملزم کو گرفتار کر کے اس کے خلاف مقدمہ درج کر لیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ نوشہرہ میں بچوں کے ساتھ زیادتی کایہ 5واں واقعہ ہے۔

دوسری جانب بچوں کےجنسی استحصال اور تشدد کی روک تھام سے متعلق اسپیکر کےپی اسمبلی مشتاق غنی کی صدارت میں اجلاس ہوا جس میں شرکاء کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ سوشل میڈیاکےغلط استعمال نےجنسی جرائم میں اضافہ کیا جب کہ غربت کی وجہ سےبھی بچوں کاجنسی وجسمانی استحصال بڑھ رہاہے۔

اسپیکر مشتاق غنی نے کہا کہ بچوں سےزیادتی روکنےکےلئے ہر حد تک جائیں گے، تجاویز میں ماڈل کو رٹس اور ماڈل پولیس اسٹیشن بنانے پرزور دیں گے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں