پی ایس پی رہنما انیس قائم خانی جلاؤ گھیراؤ کیس میں بری -
The news is by your side.

Advertisement

پی ایس پی رہنما انیس قائم خانی جلاؤ گھیراؤ کیس میں بری

کراچی : پی ایس پی رہنما انیس قائم خانی جلاؤ گھیراؤ کیس میں بری کردیا گیا، انیس قائم خانی کا کہنا تھا کہ کراچی اور حیدرآباد کے لوگ سمجھدار ہیں، دوہزار اٹھارہ میں بتائیں گے پی ایس پی کی کتنی قوت ہے۔

تفصیلات کے مطابق سیشن کورٹ حیدرآباد میں جلاؤ گھیراؤ کے مقدمے میں پی ایس پی کے مرکزی صدر انیس قائم خانی پیش ہوئے ، عدالت نے انیس قائمخانی کو مقدمے سے باعزت بری کردیا گیا۔

سماعت کے بعد انیس قائم خانی نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ مقدمہ میں بری ہونے پربہت خوشی ہے ، 2018 کے الیکشن میں مخالفین کی ضمانتیں ضبط کرادیں گے، 2018 میں ہمارا یکطرفہ مقابلہ ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ کراچی حیدرآباد کا مینڈیٹ جن کے پاس تھا انہوں نے عوام کو تنہا چھوڑدیا، دونوں شہر کچرے کے ڈھیر میں تبدیل ہوگئے، سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوگئیں، ہم حکمرانوں پر معاملات درست کرنے کیلے دباؤ ڈالتے رہیں گے۔

پی ایس پی رہنما کا کہنا تھا کہ جو لوگ ہمارے حیدرآباد پکا قلعہ کے بڑے جلسے کو جلسی کہہ رہے ہیں انہیں اس کا حق حاصل ہے، اگر پکا قلعہ نہیں تو کسی اور گراؤنڈ پر اپنی سیاسی طاقت کا مظاہرہ کرسکتے ہیں۔

انکا کہنا تھا کہ فاروق ستار کا احترام کرتے ہیں، ہمیں ڈیڑھ انچ کی مسجد بنانے کا طعنہ دینے والوں کے پاس تو اپنی ڈیڑھ انچ کی مسجد بھی نہیں ہے

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں