The news is by your side.

Advertisement

نائیک محمد اکبر کو شہید کرنے والے منشیات فروش کا بھائی پولیس میں تعینات ہونے کا انکشاف

راولپنڈی: گزشتہ دنوں گرفتار منشیات فروشوں سے تحقیقات میں اہم انکشافات سامنے آئے ہیں، معلوم ہوا ہے کہ نائیک محمد اکبر کو شہید کرنے والے منشیات فروش کا بھائی پولیس میں تعینات ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد، مانگا میں قائم منشیات کے سب سے بڑے بین الصوبائی اڈے پر اے این ایف کی کارروائی میں نائیک محمد اکبر کی شہادت کے معاملے میں تحقیقات میں بڑی پیش رفت ہوئی ہے۔

ذرایع نے بتایا ہے کہ مانگا میں قائم منشیات کے اڈے پر کنٹینرز سے منشیات اتاری جاتی تھی، اور پھر یہ منشیات مری، آزاد کشمیر، اسلام آباد، راولپنڈی سمیت پنجاب کے مختلف شہروں میں سپلائی کی جاتی تھی۔

یہ بھی معلوم ہوا کہ اے این ایف کے چھاپے کے دوران فائرنگ سے نائیک محمد اکبر کو شہید کرنے والے فیضان عباسی کا بھائی یاسر عباسی اسلام آباد پولیس میں تعینات ہے، جو منشیات سے بھرے کنٹینرز کو پولیس ناکوں سے کلیئر کرواتا تھا۔

چھاپے کے دوران ملزم فیضان عباسی فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا تھا جس کی گرفتاری کے لیے چھاپے جاری ہیں، ملزم گاؤں کے مکینوں کو دھمکیاں بھی پہنچا رہا ہے، ذرایع کا کہنا ہے کہ اہم شخصیات کے پروٹوکول میں تعینات اہل کاروں سے بھی ملزمان کے رابطے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں