site
stats
انٹرٹینمںٹ

اینجلینا جولی بھی ٹرمپ کے خلاف بول پڑیں

نیویارک : ہالی وڈ اداکارہ انجلینا جولی کا کہنا ہے کہ مذہب کی بنیاد پر امتیاز برتنا آگ سے کھیلنے کے مترادف ہے۔

ہالی وڈ اداکارہ انجلینا جولی بھی امریکی صدر ڈونٌڈ ٹرمپ کیخلاف پڑیں ، انجلینا جولی نے کہا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی سات ممالک اور تارکین وطن کے داخلے کی پابندی کے فیصلے سے پناہ گزین متاثر ہوں گے اور شدت پسندی بھی بڑھے گی۔

اداکارہ نے امریکی صدر کو خبردار کیا کہ ان کی امیگریشن پالیسی مذہب کی بنیاد پر امتیاز برتنا ہے ، جو آگ سے کھیلنے کے مترادف ہے۔

angelina-post-1

آسکر ایوارڈ یافتہ انجلینا جولی نے مزید کہا کہ میرے چھ بچے غیر ملکی زمین پر پیدا ہوئے اور امریکی شہری ہونے پر فخر ہے ،یقین رکھتی ہوں کہ ملک کی حفاظت ضروری ہے لیکن فیصلے حقائق کی بنیاد پر ہونے چاہئے نہ کہ خوف کی بنیاد پر۔

انجلینا جولی اقوام متحدہ کی ہائی کمشنر برائے “پناہ گزین” کی خیرسگالی کی سفیر بھی ہیں۔


مزید پڑھیں : ٹرمپ کے مسلمان مخالف اقدامات، ایرانی اداکارہ کا آسکر ایوارڈ کی تقریب میں شرکت سے انکار


یاد رہے چند روز قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے نئے ایگزیکٹو آرڈر پر دستخط کرکے امریکا میں تارکین وطن کے داخلے کے پروگرام کو معطل کرتے ہوئے 7 مسلمان ممالک کے شہریوں کے امریکا میں داخلے پر بھی پابندی عائد کردی تھی۔

آرڈر کے مطابق مسلمان ممالک ایران، عراق، لیبیا، صومالیہ، سوڈان، شام اور یمن کے شہریوں کو 90 دن تک امریکا کے ویزے جاری نہیں کیے جائیں گے جبکہ شامی مہاجرین کے امریکا میں داخلے پر تاحکم ثانی پابندی عائد کردی گئی تھی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top