The news is by your side.

Advertisement

مودی نے خصوصی حیثیت ختم کرکے کشمیر پرقبضہ کرلیا، این ڈبلیو پیٹرسن

واشنگٹن: سابق امریکی سفیر این ڈبلیو پیٹرسن کا کہنا ہے کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے خصوصی حیثیت ختم کرکے کشمیر پر قبضہ کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق سابق امریکی سفیر این ڈبلیو پیٹرسن کا کہنا ہے کہ امریکا افغان طالبان کے ساتھ مصروف ہے، بھارت نے امریکا کی مصروفیت کا فائدہ کشمیر میں اٹھایا۔

انہوں نے کہا بھارت نے فیصلے کے لیے وقت کا انتخاب سوچ سمجھ کر لیا، مودی نے خصوصی حیثیت ختم کرکے کشمیر پرقبضہ کرلیا۔

این ڈبلیو پیٹرسن نے کہا کہ مسئلہ کشمیر پاکستانی عوام، لیڈروں لیے جذباتی مسئلہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں بھی امریکی صدور نے بھارتی مرضی کے خلاف قدم اٹھانے سے گریز کیا۔

آرٹیکل 370 اے ختم کرنے کے بعد مقبوضہ کشمیر میں 19ویں روز بھی کرفیو جاری ہے، موبائل فون، انٹرنیٹ سروس بند اور ٹی وی نشریات معطل ہیں۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں آج مسلسل 19ویں روز بھی کرفیو برقرار ہے اور مواصلات کا نظام مکمل پر معطل ہے، قابض انتظامیہ نے ٹیلی فون سروس بند کررکھی ہے جبکہ ذرائع ابلاغ پرسخت پابندیاں عائد ہیں۔

کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق مواصلاتی نظام کی معطلی، مسلسل کرفیو اور سخت پابندیوں کے باعث لوگوں کو بچوں کے لیے دودھ، زندگی بچانے والی ادویات اور دیگر اشیائے ضروریہ کی شدید قلت کا سامنا ہے۔

مقبوضہ کشمیر میں حریت قیادت کی جانب سے نماز جمعہ کے بعد احتجاج کی کال دی گئی ہے، نماز جمعہ کے بعد سری نگر میں اقوام متحدہ کے دفتر کی جانب مارچ کیا جائے گا۔

یاد رہے کہ پانچ اگست کو مودی سرکار نے کشمیر کو خصوصی حیثیت دینے والے بھارتی آئین کے آرٹیکل 370 اے کو ختم کردیا تھا۔

راجیہ سبھا میں بل کے حق میں 125 جبکہ مخالفت میں 61 ووٹ آئے تھے، بھارت نے 6 اگست کو لوک سبھا سے بھی دونوں بل بھاری اکثریت کے ساتھ منظور کرالیے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں