The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب کا حج سے متعلق ایک اور بڑا فیصلہ

ریاض: سعودی عرب نے حج کے بعد تمام حجاج کو آئسولیٹ کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق سعودی حکومت نے گزشتہ روز محدود پیمانے پر حج کی اجازت دینے کا اعلان کیا، جس کے بعد اب یہ بھی فیصلہ کیا گیا ہے کہ تمام حجاج کو حج کے بعد آئسولیٹ کیا جائے گا۔

سعودی وزیرصحت کا کہنا ہے کہ حج کی ادائیگی کے بعد تمام حجاج قرنطینہ کردیے جائیں گے، جبکہ حج کی اجازت 65سال سے کم عمر افراد کو ہی دی جائے گی، مختلف امراض میں مبتلا افراد حج نہیں کرسکیں گے۔

گزشتہ روز سعودی حکومت نے محدود پیمانے پر حج کی اجازت دینے کا اعلان کیا تھا، سعودی وزارت خارجہ نے کہا تھا کہ سعودی عرب سے باہر سے کوئی حج پر نہیں آئے گا، صرف مقامی طور پر رہائش پذیر افراد کو حج کی اجازت ہوگی۔

سعودی عرب میں‌ مقیم افراد کو محدود پیمانے پر حج کی اجازت دینے کا اعلان

واضح رہے کہ تقریباً 25 لاکھ کے قریب افراد ہر سال حج کی سعادت حاصل کرنے مختلف ممالک سے جاتے ہیں تاہم کرونا کی وجہ سے رواں سال یہ ممکن نہیں ہو سکے گا، خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق رواں سال حج انتہائی محدود تعداد میں حجاج کرام کے ساتھ ہوگا، یہ فیصلہ عازمین حج کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے کیا گیا ہے۔

دوسری جانب ترجمان وزارت مذہبی امور کے مطابق سعودی وزیر حج و عمرہ نے وفاقی وزیر مذہبی امور نور الحق قادری سے ٹیلی فونک رابطہ کر کے رواں سال محدود حج کے فیصلے سے باضابطہ طور پر آگاہ کردیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں