The news is by your side.

Advertisement

سندھ پولیس کا ایک اور مقابلہ جعلی قرار

کراچی : سندھ پولیس کا ایک اور مقابلہ جعلی نکلا، ہائی کورٹ نے پولیس پارٹی کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرنے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائیکورٹ نے پولیس کا ایک اور مقابلہ جعلی قرار دیتے ہوئے واقعے میں ملوث پولیس اہلکاروں کے خلاف محکمہ جاتی کارروائی کا حکم دے دیا۔

واقعے میں اے ایس آئی عمران، پولیس کانسٹیبلز عارف، سجاد، وقار اور فہد علی شامل ہیں، عدالت نے محکمہ جاتی کارروائی کا حکم ایس ایس پی ویسٹ کو دیا۔

عدالت نے کیس کی شنوائی کرتے ہوئے کہا کہ ملزمان نے دو شہریوں غلام شبیر اور غلام رسول کو بے دردی سے قتل کیا۔

عدالت نے ریمارکس دئیے کہ پولیس نے ملزمان کی جانب سے بھاری اسلحے سے فائرنگ کرنے کا دعویٰ کیا تھا تاہم جائے وقوعہ سے گولیوں کے خول صرف تین برآمد ہوئے اور پولیس نے ملزمان سے جو اسلحہ برآمد کیا وہ بھی خول سے میچ نہیں کرتے۔

عدالت نے کہا کہ ملزمان کےخلاف ڈکیتی کے شواہد بھی نہیں ملے اور ایم ایل او کے مطابق مقتولین کو2فٹ کےفاصلےسےگولی ماری گئی۔

واضح رہے کہ پولیس نے سرجانی تھانےکی حدود میں 2 ملزمان کی ہلاکت کا دعویٰ کیا تھا اور ملزمان کے خلاف 2019 میں مقابلہ اور اسلحے کا مقدمہ درج کیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں