The news is by your side.

Advertisement

راولپنڈی میں سوائن فلو کی ایک اور مریضہ جاں بحق، تعداد 13 ہوگئی

راولپنڈی: پنجاب میں سوائن فلوکی ایک اورمریضہ جان کی بازی ہارگئی جس کے بعد اس وبا سے جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد 13 ہوگئی ہے جبکہ مصدقہ کیسسزکی تعداد 52 تک جا پہنچی ہے۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ پنجاب میں سوائن فلو کے مصدقہ کیسسز کی تعداد 52 تک جا پہنچی ہے جن میں سے بیشترکا تعلق ڈیرہ اسماعیل خان، ملتان، لاہوراورچکوال سمیت مختلف علاقوں سے ہے۔

گزشتہ روزبھی جنوبی پنجاب کے صدرمقام ملتان کے نشتر اسپتال میں زیرعلاج سوائن فلو کا ایک اورمریض دم توڑ گیا تھا۔

سوائن فلو کےمریضوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ پنجاب حکومت کےلیے چیلنج کی صورت اختیار کرگیا ہے اورمحکمہ صحت کو اس کے تدارک کےاحکامات جاری کردیئے گئے ہیں جس کےبعد ڈینگی اسپیشل یونٹس کو ہنگامی بنیادوں پر ایک ماہ تک سوائن فلو کے مریضوں کیلئے مختص کردیا گیا ہے۔

وزیر اعلیٰ پنجاب کے مشیر صحت خواجہ سلمان رفیق کاکہنا ہے کہ صوبائی حکومت اس وبا پر قابو پانے کی ہر ممکن کوشش کررہی ہے، اس سلسلے میں صوبے کے تمام سرکاری اسپتالوں میں خصوصی سوائن فلو وارڈز قائم کرنے کی ہدایات جاری کردی ہیں۔

دوسری جانب سندھ میں بھی سوائن فلو کا ممکنہ الرٹ جاری کردیا گیا ہے تاہم اب تک سندھ کے محکمہ صحت کی جانب سے اس حوالے سے کسی قسم کے عملی اقدامات نہیں اٹھائے گئے ہیں۔

واضح رہے کہ پاکستان میں سال 2009 میں سوائن فلو کا پہلا کیس رجسٹر ہوا تھا جس کے بعد سے اب تک متعدد کیسزسامنے آچکے ہیں۔

پاکستان کی نسبت بھارت میں سوائن فلو سے متاثرہونے والے افراد کی تعداد حیرت انگیزطور پرزیادہ ہے اور گزشتہ سال بھارت میں 13 ہزار افراد سوائن فلو سے متاثر ہوئے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں