The news is by your side.

Advertisement

کراچی: چوری کے شبہ میں لڑکے کو زندہ جلانے کی کوشش

آئی جی سندھ نے واقعے کی تفصیلات طلب کر لیں، ملوث افراد کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی ہدایت

کراچی: شہر قائد کے علاقے سعید آباد موچکو میں مبینہ چور پر تشدد کا ایک اور واقعہ سامنے آ گیا، مبینہ چور ریحان ایک گھر میں گھس کر چوری کرتے ہوئے پکڑا گیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق پولیس نے کہا ہے کہ سعید آباد موچکو میں مبینہ چور نے ممتاز کے گھر میں گھس کر چوری کی واردات کرنے کی کوشش کی لیکن پکڑا گیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ لڑکے پر چوری کے الزام میں تشدد کیا گیا، پکڑے جانے کے بعد اسے برہنہ کیا گیا، اسے مارا پیٹا گیا اور پھر پیٹرول بھی چھڑکا گیا۔

پولیس نے واقعے میں ملوث 2 افراد کو حراست میں لے لیا ہے، پولیس کا کہنا ہے کہ گھر کے مالک ممتاز اور بھینسوں کے باڑے کے مالک کو حراست میں لیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:  بہادر آباد میں کم عمر چور کی تشدد سے موت، اہل خانہ کا لاش سڑک پر رکھ کر احتجاج

مزید ملزمان کی گرفتاری کے لیے بھی پولیس کی جانب سے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

ادھر لڑکے کو مبینہ طور پر زندہ جلانے کی کوشش پر آئی جی سندھ ڈاکٹر کلیم امام نے ایس ایس پی ویسٹ سے تفصیلات طلب کر لی ہیں، انھوں نے ہدایت کی کہ واقعے میں ملوث افراد کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی عمل میں لائی جائے۔

آئی جی سندھ نے کہا کہ تشدد کا نشانہ بننے والے لڑکے نے اگر جرم کا ارتکاب کیا ہے تو اس کے خلاف بھی باقاعدہ قانونی کارروائی کی جائے۔

یاد رہے کہ دس دن قبل کراچی کے علاقے بہادر آباد میں مبینہ کم عمر چور ریحان کو چوری کے الزام میں اہل علاقہ نے پکڑ کر تشدد کیا تھا، واقعے کی ویڈیو کے مطابق لڑکے کو برہنہ کر کے گرل سے باندھ کر مارا پیٹا گیا جس سے وہ جاں بحق ہو گیا۔

وزیر اعلیٰ نے واقعے کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے قاتلوں کے خلاف سخت کارروائی کی ہدایت کی تھی۔ پولیس نے واقعے میں ملوث دو افراد کو گرفتار کر لیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں