The news is by your side.

Advertisement

کورونا ویکسین کتنی فائدہ مند ہوگی؟ ماہرین صحت نے خطرے کی گھنٹی بجادی

نیو یارک : ماہرین صحت نے کہا ہے کہ کورونا ویکسین اگر مارکیٹ میں آبھی گئی تو سو فیصد مفید نہیں ہوگی، اس جان لیوا وبا سے بچنے کیلئے ایس او پیز پر عمل کرنا ہر صورت لازمی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق وانڈر بلٹ یونیورسٹی میڈیکل سینٹر میں وبائی امراض کے پروفیسر ولیم شافنر نے وائس آف امریکہ سے گفتگو کے دوران بتایا کہ ویکسین وائرس کے خلاف زرہ بکتر نہیں ہوگی۔

کورنا وائرس کے دنیا بھر میں بڑھتے پھیلاؤ کے حوالے سے ماہرین کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس سے بچنے کے لیے اٹھائے جانے والے حفاظتی انتظامات جیسے ماسک پہننا، سماجی دوری اور ہاتھوں کو دھونے جیسے اقدامات ویکسین آنے کے بعد بھی برقرار رہیں گے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ کورونا ویکسین سو فیصد مفید نہیں ہوگی، موسمی انفلوئینزا کے لیے استعمال ہونے والی ویکسین حالیہ برسوں میں 60 فیصد تک کامیاب رہی ہے جبکہ اس دوران اس کی افادیت 10 فیصد بھی رہی ہے۔

امریکی فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن (ایف ڈی اے) نے کرونا وائرس کی ویکسین کے مفید ہونے کا معیار کم سے کم 50 فیصد رکھا ہے۔

ایف ڈی اے کے لیے ماضی میں کام کرنے والے چیف سائنس دان جیسی گڈمین کے بقول جزوی طور پر مفید ویکسین زیادہ خطرے والے طبقات کے لیے سود مند ہوگی جیسے فرنٹ لائن ورکر جو اسپتالوں میں کام کر رہے ہیں یا جنہیں صحت کی تکالیف ہیں مگر یہ تمام آبادی کے لیے مفید نہیں ہوگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں