The news is by your side.

Advertisement

’باکا میں شہریوں کی لاشوں کی تصاویر دیکھ کر گہرے صدمے سے دوچار ہو گیا ہوں‘

نیویارک: اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتیرس نے کہا ہے کہ یوکرین کے دارالحکومت کیف کے قریب باکا قصبے میں ہلاک ہونے والے شہریوں کی تصاویر دیکھ کر انھیں ‘گہرا صدمہ’ پہنچا ہے۔

تفصیلات کے مطابق یوکرین کے پراسیکیوٹر جنرل کا کہنا ہے کہ 410 شہریوں کی لاشیں کیف کے ان علاقوں سے ملی ہیں جہاں سے روسی افواج نے انخلا کیا ہے۔

لاشوں کی تصاویر دیکھنے کے لیے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل نے واقعے کی آزادانہ تحقیقات کا مطالبہ بھی کر دیا ہے۔

الجزیرہ نے اس حوالے سے ایک شاکنگ فوٹیج بھی جاری کی ہے، جس میں جگہ جگہ بکھری لاشوں کو دیکھا جا سکتا ہے۔ تاہم دوسری طرف روس کی وزارت دفاع نے اس بات کی تردید کی ہے کہ روسی افواج نے باکا میں شہریوں کو ہلاک کیا۔

روس کی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ یوکرین کے قصبے باکا (Bucha) میں ہلاک ہونے والے شہریوں کی فوٹیج امریکا نے روس پر الزام لگانے کی سازش کے تحت ‘تیار’ کی ہے۔ ماسکو نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل سے درخواست کی ہے کہ وہ باکا میں ‘یوکرینی بنیاد پرستوں کی اشتعال انگیزی’ کے بارے میں بات کرنے کے لیے اجلاس طلب کرے۔

ماریہ زاخارووا نے کہا کہ مرنے والے شہریوں کی تصاویر پر فوری طور پر مغربی شور و غل سے ظاہر ہوتا ہے کہ یہ کہانی روس کی ساکھ کو خراب کرنے کے منصوبے کا حصہ تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں