The news is by your side.

Advertisement

کرنسی سمگلنگ کیس: ایان علی پیش نہ ہوئیں تو اشتہاری قرار دے دیں گے، عدالت

راولپنڈی : کرنسی سمگلنگ کیس ماڈل ایان علی کی مسلسل غیرحاضری پر کسٹم عدالت نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر  پیش نہ ہونے پر  اشتہاری قرار دینےکی وارننگ دے دی جبکہ استثنیٰ سمیت 3 مختلف درخواستیں مسترد کردیں۔

تفصیلات کے مطابق کسٹم عدالت میں ماڈل ایان علی کیخلاف کرنسی اسمگلنگ کیس کی سماعت ہوئی ، ایان علی کی مسلسل غیرحاضری پرکسٹم عدالت کا برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ایان علی کی حاضری سے استثنیٰ سمیت 3 مختلف درخواستیں خارج کردیں ، جس میں ناقابل ضمانت وارنٹ منسوخی اورمقدمہ خارج کرنے کی درخواست بھی شامل ہیں۔

عدالت نے  ایان علی کو آئندہ سماعت پر  ہر  حال میں پیش ہونے کا حکم دیتے ہوئے کہا پیش نہ ہونے پر اشتہاری قرار دینے کی کارروائی شروع ہوجائےگی۔

کسٹم عدالت نے کرنسی سمگلنگ کیس کی سماعت 15فروری تک ملتوی کرتے ہوئے ضمانتی اورگواہان کوسمن جاری کردیئے۔

یاد رہے 18 جنوری کو معروف ماڈل ایان علی کی 3 مختلف درخواستوں پر عدالت نے فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

مزید پڑھیں : کیس میں پیش ہونا چاہتی ہوں لیکن طبیعت خراب ہے، ماڈل ایان علی

کسٹم پراسیکیوٹر کا کہنا تھا کہ ملزمہ دانستہ طور پر غیر حاضر ہے لہذا اشتہاری قرار دینے کی کارروائی شروع کی جائے، ملزمہ 2 سال ایک ماہ سے غیر حاضر ہے، ضمانتیوں کے خلاف کارروائی کی جائے۔

جس پر وکیل صفائی نے عدالت میں بیان دیا کہ ملزمہ کے وارنٹ گرفتاری منسوخ کیے جائیں تو ملزمہ عدالت آجائے گی۔

خیال رہے 6 اکتوبر 2018 کو کرنسی اسمگلنگ کیس میں عدالت نےماڈل ایان علی کے ناقابل ضمانت گرفتاری وارنٹ جاری کئے تھے اور کہا تھا  کہ پرانے میڈیکل سرٹیفکیٹ پراتنااستثنیٰ نہیں دیاجا سکتا۔

بعد ازاں نومبر 2018 میں ماڈل ایان علی نے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری واپس لینے کی درخواست کرتے ہوئے کہا تھا کیس میں پیش ہونا چاہتی ہوں لیکن طبیعت خراب ہے، جب بھی ڈاکٹراجازت دے واپس آجاؤں گی۔

واضح رہے کہ ماڈل ایان علی 2015 میں اسلام آباد ائیرپورٹ سے دبئی پانچ لاکھ ڈالرز غیر قانونی طورپر لے جاتے ہوئے پکڑی گئیں تھیں، جس کے بعد انہیں تین ماہ جیل کی ہوا کھانی پڑی تھی جبکہ ایان علی کا نام ای سی ایل میں ڈال دیا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں