The news is by your side.

Advertisement

نیب کا مفتاح اسماعیل کے خلاف گھیرا تنگ، انکوائری کی منظوری

اسلام آباد: نیب نے لیگی رہنما اور سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کے خلاف انکوائری کی منظوری دے دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین نیب جاوید اقبال کی زیر صدارت ایگزیکٹیوبورڈ کا اجلاس ہوا، اجلاس میں چار انکوائریوں کی منظوری دے دی گئی۔

نیب اعلامیے کے مطابق سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کیخلاف نیب انکوائری منظور کرلی گئی جبکہ چیئرمین نیب نے مالم جبہ کیس پشاورہائیکورٹ کی روشنی میں آگےلیکر چلنے کی ہدایت کی ہے، مالم جبہ کیس میں لیگی رہنما امیر مقام کا نام بھی شامل ہے۔

نیب اعلامیے کے مطابق این ایچ اے کے خلاف دو انکوائریز کی منظوری دی گئی جبکہ محکمہ آبپاشی اور ریونیو پشاور کے افسران کیخلاف انکوائری کو منظور کرلیا گیا ہے۔

اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے چیئرمین نیب نے ادارے کی کارکردگی واضح کرتے ہوئے بتایا کہ نیب نے 814ارب روپے برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائے، ملک کی مختلف احتساب عدالتوں میں بارہ سو تہتر ریفرنس دائر ہیں، جن کی مالیت تیرہ سو ارب ہے۔

چیئرمین نیب جاوید اقبال کا کہنا تھا کہ نیب نے غیرقانونی ہاؤسنگ سوسائٹیوں سے پیسے برآمد کرکے واپس کروائے، نیب کا ایمان کرپشن فری پاکستان ہے۔

واضح رہے کہ مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کو ایل این جی کیس میں ضمانت پر رہا ہیں، مفتاح اسماعیل نے مسلم لیگ ن کے سابق دور حکومت میں اس وقت کے وزیر پٹرولیم شاہد خاقان عباسی نے قطر کے ساتھ ایل این جی درآمد کرنے کا معاہدہ کیا تھا۔

سابق وزیر پر الزام ہے کہ انہوں نے ایل این جی کی درآمد اور تقسیم کا 220 ارب روپے کا ٹھیکہ دیا جس میں وہ خود حصہ دار ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں