خواتین پر چاقو کے وار، کیا ساہیوال کے ملزم نے کراچی کا رخ کرلیا ؟ karachi
The news is by your side.

Advertisement

خواتین پر چاقو کے وار، کیا ساہیوال کے ملزم نے کراچی کا رخ کرلیا ؟

کراچی : کراچی کی طرح 2013 میں ساہیوال اور چیچہ وطنی میں بھی چاقر بردار شخص راہ چلتی تنہا خواتین پر چاقو سے وار کرتا تھا، واقعہ کی مماثلت سے سے ملزم کی گرفتاری میں مدد مل سکتی ہے.

تفصیلات کے مطابق کراچی میں دو ہفتوں کے درمیان بارہ سے زائد خواتین پو چاقو سے حملہ کرنے والا شخص گلستان جوہر اور گلشن اقبال میں خوف کی علامت بن گیا ہے اور چھلاوا کی صورت غائب ہونے والے اس ملزم کی مماثلت 2013 میں ساہیوال اور چیچہ وطنی اسی طرز کی واردات کرنے والے مجرم میں بھی پائی جاتی ہے.

اے آر وائی نیوز نے ساہیوال اور چیچہ وطنی میں 243 خواتین پر چاقو سے وار کرنے والے مجرم وسیم کا پتہ چلایا ہے جو 2013 میں چیچہ وطنی میں شام ہوتے ہی تنہا جاتی خواتین پر چاقو کے وار کرکے فرار ہوجایا کرتا تھا یہاں تک کہ 207 خواتین کو اپنی سفاکیت کا نشانہ بنانے والا شخص پولیس کو بآسانی چکما دیتا رہا.

 اسی سے متعلق : خواتین پر چاقو کے وار، اہم ملزم گرفتار، پولیس کا دعویٰ

عوام کے دباؤ اور اعلیٰ افسران کے نوٹس لینے پر مقامی پولیس متحرک ہوئی تو ساہیوال میں ملزم کے گرد گھیرا تنگ ہوگیا جس کے بعد اس نے ساہیوال کا رخ کیا اور وہاں اپنے جرائم کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے 36 خواتین کو نشانہ بنایا اور بلآخر گرفتار ہوا جس کے بعد ایسے واقعات ہونا مکمل طور پر ختم ہوگئے تھے.

ذرائع کے مطابق ملزم وسیم ملاح کو ذہنی مریض ہونے اور خواتین کی معمولی زخمی کرنے کے باعث عدالت نے محض 8 ماہ کی سزا سنائی جس کے بعد اسے جیل رہا کردیا گیا اور اس کے بعد سے تاحال اس کا بارے میں کچھ معلوم نہیں ہوسکا ہے کہ وہ کہاں ہے؟ اور آج کل کیا کر رہا ہے؟

تاہم کراچی میں ساہیوال اور چیچہ وطنی کے طرز کے واقعات نے تحقیقاتی اداروں کی توجہ ایک بار پھر وسیم ملاح کی جانب مرکوز کروادی ہے تاہم وہ اپنے گھر پر موجود نہیں ہے اور نہ ہی اہل خانہ کو کچھ بتاکر گیا ہے چنانچہ کراچی اس رخ پر بھی کام کر رہی ہے اور وسیم ملاح کو ڈھونڈنے کی کوششوں میں مصروف عمل ہے.

دوسری جانب آئی جی کراچی نے وزیراعلیٰ سندھ سے ہونے والی ملاقات میں کراچی میں چاقو بردار شخص کی خواتین پر حملے سے متعلق کیس میں پیشرفت سے آگاہ کرتے ہوئے ایک اہم ملزم کی گرفتاری سے متعلق انفارمیشن شیئر کی ہیں۔

یاد رہے گزشتہ دو ہفتوں کے درمیان گلستان جوہر میں سات خواتین کو چاقو بردار شخص نے اپنا نشانہ بنایا جب کہ گزشتہ شب گلشن اقبال، یونیورسٹی روڈ اور گلشن جمال میں یکے بعد دیگرے محض تین گھنٹے کے دوران پانچ خواتین پر چاقو سے وار ہونے کے واقعات رپورٹ ہوئے تھے.


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں