The news is by your side.

Advertisement

افغانستان میں دیرپا امن کے لئے مفاہمت ضروری ہے، آرمی چیف

میونخ :‌آرمی چیف جنرل راحیل شریف کا کہنا ہےافغانستان میں پائیدار امن کے لیے مفاہمتی عمل انتہائی اہم ہے، پاک چین اقتصادی راہداری سے خطے کے دیگر ممالک بھی فائدہ اٹھا سکیں گے.

آرمی چیف نے جرمنی کے شہر میونخ میں سینٹ کام ایشیاء سیکیورٹی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے پاکستان کی داخلی اور خارجی سلامتی کی صورتحال پر روشنی ڈالی اور دہشت گردی سے متاثرہ پاکستان کی سماجی و اقتصادی صورتحال سے شرکاء کو آگاہ کیا، جنرل راحیل شریف کا کہنا تھا کہ افغانستان میں شدید عدم استحکام سے خطے پر اثرات کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے۔

پاک فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے زور دیا ہے کہ خطے بالخصوص افغانستان میں پائیدار امن اور استحکام کیلئے تمام فریقین مفاہمت کے عمل کو جلد از جلد بحال کریں ، پاک چین اقتصادی راہداری کے ثمرات سے خطے کے تمام ممالک فائدہ اٹھا سکتے ہیں.

پاک فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف کا کہنا تھا کہ مشکلات کے باوجود افغانستان میں دیرپا اور پائیدار امن کیلئے مفاہمتی عمل نہایت ضروری ہے ، تمام فریقین استحکام کے فروغ کیلئے مفاہمت کے عمل کو فروری بحال کریں .

جنرل راحیل شریف نے مشکلات سے نکل کر مستحکم ہوتے ہوئے پاکستان کی کوششوں پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ ترقی اور استحکام کیلئے موجودہ کوششوں سے پاکستان اور خطے کیلئے اقتصادی ترقی کے نئے مواقع پیدا ہوئے ہیں.

انہوں نے پاک افغان سرحد پر بہتر انتظامات کیلئے موثر اقدامات کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے ہے کہا کہ آپریشن ضرب عضب کے مقاصد کے حصول کیلئے پاک افغان سرحدی امور بہتر بنائے جائیں ، کیونکہ پرامن افغانستان علاقائی روابط کو بہتر بنا سکتا ہے.

انہوں نے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری کے ثمرات سے خطے کے تمام ممالک فائدہ اٹھاسکتے ہیں اور پاکستان کی سماجی و اقتصادی ترقی کیلئے دہشت گردی سے چھٹکارا پانا ضروری ہے.

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں