The news is by your side.

Advertisement

نواز شریف کی والدہ کے انتقال پر آرمی چیف، وزیراعظم اور صدر مملکت کا اظہار افسوس

لاہور: آرمی چیف ، صدر مملکت، وزیراعظم سمیت ملک بھر کی سیاسی و مذہبی شخصیات نے نواز شریف، شہباز شریف کی والدہ شمیم بیگم کےانتقال پر تعزیت کا اظہار کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق بیگم شمیم کے انتقال پر ڈی جی آئی ایس پی آر نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری اپنے بیان میں کہا کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے نواز شریف، شہباز شریف کی والدہ کے انتقال پر اظہار تعزیت کیا، آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہا کہ اللہ تعالی ٰمرحومہ کےدرجات بلند کرے۔

صدر مملکت عارف علوی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری بیان میں میاں نواز شریف اور میاں شہباز شریف کی والدہ بیگم شمیم ​اختر کی وفات پر شریف خاندان سے اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا کہ اللہ تعالی مرحومہ کو جوار رحمت میں جگہ دے۔

وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے بھی نواز شریف اور شہباز شریف کی والدہ کےا نتقال پر تعزیت کا اظہار کیا گیا ہے، اپنے تعزیتی بیان میں وزیر اعظم نے کہا کہ اللہ مرحومہ کے درجات بلند فرمائے۔

صدر پاکستان ڈیموکریٹک مولانا فضل الرحمان نے پشاور جلسے کے دوران اپنے خطاب کے آغاز پر بیگم شمیم کے انتقال پر نوازشریف ،شہباز شریف اور مریم نواز سے تعزیت کا اظہار کیا، مولانا فضل الرحمان نے دعا کی کہ اللہ تعالیٰ مرحومہ کی مغفرت فرمائے، اور ان کے درجات بلند کرے۔

Nawaz Sharif's mother Begum Shamim Akhtar passes away in London

وزیر اطلاعات شبلی فراز نے بھی بیگم شمیم کے انتقال پر اپنے تعزیتی بیان میں کہا کہ نواز شریف اور محمد شہباز شریف کی والدہ کے انتقال پر بہت افسوس ہے، اللہ مرحومہ کو جوار رحمت میں اعلی ٰمقام اور لواحقین کوصبر جمیل عطا فرمائے۔

سابق وزیر اعظم پاکستان نواز شریف کی والدہ شمیم اختر 93 برس کی عمر میں خالق حقیقی سے جا ملیں، انتقال کے وقت وہ بیٹے نواز شریف کے ساتھ لندن میں تھیں۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے ڈپٹی سیکریٹری جنرل عطا تارڑ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے ٹویٹ میں بتایا کہ میاں محمد نواز شریف اور میاں محمد شہباز شریف کی والدہ محترمہ وفات پا گئی ہیں۔

بیگم شمیم اختر 9 مارچ سنہ 1927 کو لاہور میں پیدا ہوئی تھیں، ان کی شادی میاں شریف سے ہوئی جن سے ان کے 3 بیٹے عباس شریف، نواز شریف اور شہباز شریف تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں