The news is by your side.

Advertisement

یوم شہداء

راولپنڈی : 30 اپریل کو ہرسال کی طرح امسال بھی وطن کے تحفظ کی خاطر جان دینے والے بہادر جوانوں کے دن سے منصوب کیا گیا ہے ۔

تقریب میں پاک افواج کے تینوں دستوں کے سربراہان ، سیاستدان سمیت تمام اکائیوں سے تعلق رکھنے والے افراد شرکت کرتے ہیں۔ پوری قوم کی جانب سے تمام شہیدوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے وطن عزیز سے تجدید کی جاتی ہے کہ اس کے تحفظ کو ہر صورت یقینی بنایا جائے گا ۔ملک پاکستان کا دفاع کرتے ہوئے اپنی جان کا نظرانہ پیش کئے جانے والےجوانوں کو اعلیٰ حکومتی ایوارڈ نشان حیدر سے نوازا جاتا ہے ۔

 حکومت پاکستان کی جانب سے پہلا  نشان ِ حیدر کا پہلا ایوارڈ حضرت علی ؓ کے نام پر دیا گیا ہے ۔اعلی اعزازی ایوارڈ کو ملڑی و سول ایوارڈز پر سبقت دی گئی ہے ۔اب تک یہ ایوارڈ 10 جوانوں کو دیا جاچکاہے ۔ ایوارڈ کی سفارش پاک آرمی کی طرف سے کی جاتی ہے ۔

(کپیٹن راجہ محمد سرور شہید (1910سے 1948

1

کیپٹن راجہ سرور شہید 1910 میں گاوں سنگوڑی ، تحصیل گجر خان کی راجپوت فیملی میں پیدا ہوئے ۔ 1944 میں پنجاب رجمنٹ سے سفر شروع کیا ۔ تقسیم برصغیر کے بعد رضاکارانہ طور پرپاکستان آرمی میں شامل ہوگئے ۔ کشمیر آپریشن کے دوران پنجاب رجمنٹ میں بطور کمانڈر اپنی خدمات سرانجام دیں ۔اڑی سیکٹر میں مخالف کو بھاری جانی و مالی نقصان پہنچاتے ہوئے سینے پر مارٹر گولا لگنے سے 27 جولائی 1948 کو شہید ہوگئے۔

(میجر طفیل محمد شہید (1914 سے 1958

02Major-Muhammad-Tufail-Shaheed

میجر محمد طفیل شہید 1914میں ہوشیار پورپنجاب میں پیدا ہوئے۔1943 میں کمیشن پاس کر کےپنجاب رجمنٹ میں شمولیت اختیار کی  1958میں مشرقی پاکستان تعیناتی کردی گئی ۔7 اگست 1958ایک جھڑپ کے دوران گولی لگنے سے شدید زخمی ہوگئے ۔ میجر طفیل اپنے جونئیر آفیسر سے مخاطب ہوکر کہا کہ میں نے اپنی ڈیوٹی پوری کردی ہے اور دشمن بھاگ گیاہے ۔ الفاظ مکمل ہوتے ہی روح جسم سے پرواز کرگئی۔

(راجہ عزیز بھٹی شہید (1928سے 1965

03Major-Raja-Aziz-Bhatti-Shaheed

راجہ عزیز بھٹی شہید 1928 میں ہانگ کانگ میں پیدا ہوئے ۔ تقسیم برصغیر سے پہلے اپنے گاوں خیراں گجرات آکر رہائش اختیار کرلی تھی ۔1950 میں  پاک فوج کے پنجاب رجمنٹ سے اپنے کرئیر کا آغاز کیا ۔ بطور اسٹاف آفیسر شجاعت کا اعلی ایوارڈ حاصل کیا ۔1965 کی جنگ کے دوران برکی  لاہور کے مقام پر شہادت کے رتبے پر فائز ہوئے۔

(راشد منہاس شہید (1951سے 1971

Rashid Mehnas

راشد منہاس شہید 17 فروری 1951 کو کراچی میں پیدا ہوئے ۔1971 میں فضائیہ میں شمولیت اختیار کی ۔پہلی آزمائشی پرواز کے دوران جہاز میں بیٹھے سنئیر افسر کی جانب سے راشد منہاس پر تشدد کیا گیا اور جہاز کو بھارت کی جانب موڑنے کا حکم دیا گیا ۔ زخموں سے چور نوجوان نے جہاز کا رخ زمین کی جانب موڑ دیا اور پاکستان کا دفاع کرتے ہوئےشہادت حاصل کی۔

(میجر شبیرشریف شہید (1943 سے 1971

issb encyclopedia 01662

میجر رانا شبیر شریف 28 اپریل 1943کو پنجاب کے ضلع گجرات میں پیدا ہوئے ۔ آپ کی خدمات کو مد نظر رکھتے ہوئے فوجی اعزازت ستارہ امتیاز ، بہادری کی تلوار سے نوازا گیا ۔1971 میں بھارتی ٹینکوں سے سامنے ڈٹ جانے اور مقابلے کرتے ہوئے شہادت حاصل کی ۔ موجودہ آرمی چیف آف اسٹاف جرنل راحیل شریف آپ کے چھوٹے بھائی ہیں ۔

(سرور محمد حسین جنجوعہ شہید (1949سے 1971

11

سرور محمد حسین جنجوعہ 18جون 1949 کو گجر خان پنجاب میں پیدا ہوائے۔3 ستمبر 1966کو 17 سال کی عمر میں پاکستان آرمی سے وابستہ ہوئے ۔5 دسمبر 1971 کی جنگ کے دوران اعلی مہارت کے ساتھ دشمن کے 16 ٹینک تباہ کرتے ہوئے جامِ شہادت نوش کرگئے۔

(میجر محمد اکرم شہید (1938سے 1971

issb encyclopedia

میجر محمد اکرم 04اپریل 1938جہلم میں پیدا ہوئے ۔1959میں ملڑی اکیڈمی میں داخلہ حاصل کیا ۔1971  کی جنگ میں حکمت عملی کے تحت دشمن کو 5  دن تک ایک ہی جگہ منحصر رکھ کر نقصان پہنچایا۔

(محمد محفوظ شہید ( 1944سے 1971

issb encyclopedia 0295

محمد محفوظ شہید 25 اکتوبر 1944راولپنڈی ڈسٹرکٹ میں پیدا ہوئے ۔1962 میں پاک آرمی سے وابستہ ہوئے ۔1971کی جنگ میں پنجاب رجمنٹ کے ساتھ سرزمین کا دفاع کرنے کی ذمہ داری واہگہ اٹاری میں سرانجام دی ۔مشین گن چلانے کے ماہر ہونے کے باعث جنگ کے دوران بھارتی بنکر ز کو تباہ کیا ۔ فائرنگ کے تبادلے میں شدید زخمی ہوئے 17 دسمبر 1971 کو شہیدہوئے۔

(کرنل شیر خان (1970سے 1999

issb encyclopedia 01692

کرنل شیر خان 01 جنوری 1970صوابی خیبرپختونخوا ہ میں پیدا ہوئے۔ بطور کپٹین 27 سندھ رجمنٹ میں شامل ہوئے ۔کارگل کے مقام پر  مہارت کے ساتھ دشمنوں کے کیمپوں پر حملہ کر کے اپنے قبضے میں لئے دشمن کے ساتھ جھڑپ کے دوران شہید ہوئے۔

(حولدار لالک جان (1967 سے 1999

issb encyclopedia 012

لالک جان پاکستا ن کے شمالی علاقہ جات غذر (گلگت ، بلتستان ) میں پیدا ہوئے ۔ 1999 میں گارگل جنگ کے دوران دشمنوں کا مقابلہ کرتے ہوئے شہید ہوئے۔ابھی تک یہ آخر ی جوان ہیں جنہیں اعلی فوجی اعزاز نشانِ حیدر سے نوازا گیا ہے ۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں