امریکا میں تارکین وطن کے کارواں کو روکنے کیلئے فوج حرکت میں آگئی,
The news is by your side.

Advertisement

امریکا میں تارکین وطن کے کارواں کو روکنے کیلئے فوج حرکت میں آگئی

واشنگٹن: امریکا میں تارکین وطن کے کارواں کو روکنے کے لیے فوج حرکت میں آگئی، جدید بکتر بند گاڑیاں اور بھاری اسلحہ وسازوں سامان ٹیکساس کے ملٹری بیس پر پہنچا دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق پینٹا گون حکام کا کہنا ہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی ہدایات پر غیرتارکین وطن کو امریکا میں داخلے سے روکنے کے لیے امریکا اور میکسیکو کی سرحد پر پانچ ہزار دو سو فوجی اہلکار تعینات کر دئیے گیے ہیں۔

تارکین وطن کے کارواں کو روکنے کے لیے ہر ممکن اقدامات کیے جارہے ہیں، امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سختی سے کہا ہے کہ کسی بھی تارکین وطن کو خطے میں داخل ہونے کی اجازت نہیں دیں گے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق ہزاروں افراد پر مشتمل تارکین وطن کا قافلہ گوئٹے مالا میں میکیسیکو کے ساتھ سرحد کے قریب جمع ہو چکا ہے جو امریکا میں داخل ہونے کا خواہاں ہے۔

غیر قانونی تارکین وطن کے بعد نومولود بچے بھی امریکی صدر کے نشانے پر

اس کارواں میں شامل بڑی تعداد خواتین اور بچوں کی بھی ہے۔

خیال رہے کہ دو روز قبل امریکی محکمہ دفاع نے کہا تھا کہ میکسیکوسے متصل سرحد پر5 ہزارسے زائد فوج تعینات ہوگی، سرحد پرفوجیوں کواسلحہ، ہیلی کاپٹراوردیگرآلات کی فراہمی جاری ہے۔

امریکی حکام کے مطابق صدرڈونلڈ ٹرمپ کی ہدایت پرسرحد پر2 ہزارنیشنل گارڈز پہلے ہی تعینات ہیں۔

واضح رہے کہ امریکی صدر نے قافلے میں شامل ہزاروں تارکین وطن کو گینگسٹر قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ گینگ ممبرز اور دیگر مجرم تارکین وطن کے روپ میں داخل ہونا چاہتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں