The news is by your side.

Advertisement

آرنلڈ شوازینگر کی گاڑی پر ہاتھی کا حملہ

ہالی وڈ کے معروف فنکار اور کیلیفورنیا کے سابق گورنر آرنلڈ شوازینگر کو اس وقت پریشان کن صورتحال کا سامنا کرنا پڑا جب افریقہ میں ایک سفاری میں ان کی گاڑی کے پیچھے ایک ہاتھی لگ گیا۔

آرنلڈ نے اس بارے میں اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر پوسٹ کیا۔ انہوں نے کہا کہ کاش لوگوں کو ان جانوروں کی خوبصورتی کا ادراک ہو اور وہ ان کا شکار بند کردیں۔

ہاتھی نے ان کی گاڑی کو معمولی ٹکر بھی ماری۔ ڈرائیور کے مطابق تھوڑی دیر بعد ہاتھی واپس مڑ گیا۔

افریقہ میں ہر سال 30 ہزار ہاتھی مار دیے جاتے ہیں۔ تنزانیہ میں پچھلے 5 سال میں ہاتھیوں کی آبادی میں 65 کمی ہوچکی ہے۔ ڈبلیو ڈبلیو ایف کے مطابق اس کی واحد وجہ ہاتھی دانت کے حصول کے لیے ہاتھیوں کا شکار ہے۔

اگلے 6 سال میں ہاتھیوں کی نسل ختم ہونے کا خدشہ *

ماہرین کے مطابق ہاتھی اور افریقی گینڈے کے جسمانی اعضا کی تجارت نہ صرف ان کی نسل کو ختم کر سکتی ہے بلکہ اس سے حاصل ہونے والی رقم غیر قانونی کاموں میں بھی استعمال کی جارہی ہے۔ اس غیر قانونی تجارت کو کئی عالمی جرائم پیشہ منظم گروہوں کی سرپرستی حاصل ہے۔

زمبابوے میں 14 ہاتھیوں کو زہردے کرہلاک کردیا گیا *

افریقہ میں گذشتہ سال ہاتھیوں اور گینڈوں کی معدوم ہوتی نسل کے تحفظ کے لیے ایک ’جائنٹ کلب فورم‘ بنایا گیا جس کا پہلا اجلاس گذشتہ ماہ منعقد کیا گیا۔ اجلاس میں کینیا کے صدر سمیت افریقی رہنماؤں، تاجروں اور سائنسدانوں نے شرکت کی۔ اجلاس میں متفقہ طور پر ہاتھی دانت کی تجارت پر مکمل پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔ اجلاس کے آخر میں 100 ٹن کے ہاتھی دانت اور 1.35 ٹن کے گینڈے کے سینگ کے ذخیرے کو نذر آتش بھی کیا گیا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں