The news is by your side.

Advertisement

پاکستانی شارٹ فلم کے لیے روس میں بہترین فلم کا اعزاز

سرزمین پاکستان کی خوبصورتی کو اجاگر کرتی شارٹ ٹریول فلم ’میں ہوں ارض پاکستان‘ کو روس میں بیسٹ ٹریول فلم کے ایوارڈ سے نوازا گیا۔ فلم کو اقرا یونیورسٹی کے طلبا نے تیار کیا ہے۔

تقریباً 4 منٹ کے دورانیے پر مشتمل اس شارٹ فلم میں فلم ساز نے پاکستان کے حسین نظاروں کو ایسے ماہرانہ انداز میں قید کیا کہ دنیا مبہوت رہ گئی۔

فلم میں پاکستان کو قدرت کی جانب سے عطا کیے گئے خوبصورت سر سبز پہاڑ، حسین وادیاں، گنگناتے چشمے اور شمالی علاقہ جات کی بل کھاتی سڑکوں کو فلمایا گیا ہے۔

مذکورہ فلم کو گزشتہ دنوں روسی دارالحکومت ماسکو میں بیسٹ ٹریول فلم کا ایوارڈ نوازا گیا۔

فلم کے ہدایتکار علی سہیل جورا ہیں جو خود بھی اقرا یونیورسٹی سے فارغ التحصیل ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ اس فلم کو بنانے کا مقصد نہ صرف بیرون ملک بلکہ خود پاکستانیوں میں بھی اس احساس کو اجاگر کرنا ہے کہ قدرت نے ہمیں کس قدر حسین ملک سے نوازا ہے۔

ان کا کا کہنا تھا کہ اگر اس فلم کو دیکھ کر کسی ایک پاکستانی کو بھی احساس ہوجائے کہ ہم کس قدر قدرتی اور فطری نعمتوں سے مالا مال ہیں، اور وہ ان کی حفاظت کرنے لگے، تو ہمارا اس فلم کو بنانے کا مقصد پورا ہوگیا۔

فلم کو اس سے قبل بھی کئی بین الاقوامی فلم فیسٹیولز میں پیش کیا جاچکا ہے جہاں اسے بے حد پذیرائی ملی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں