پاکستان میں جلد پے پال سروس شروع کی جائے گی: اسد عمر -
The news is by your side.

Advertisement

پاکستان میں جلد پے پال سروس شروع کی جائے گی: اسد عمر

اسلام آباد: تحریک انصاف کی حکومت کے وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر کا کہنا ہے کہ آئندہ چار ماہ میں پے پال یا اس سے ملتا جلتا آن لائن پیمنٹ پلیٹ فارم جلد ہی پاکستان میں روشناس کرایا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیرخزانہ اسد عمر کا کہنا تھا کہ حکومت جانتی ہے کہ پاکستان میں با صلاحیت نوجوانوں کی ایک بڑی تعداد فری لانسنگ شعبے سے وابستہ ہے اور وہ ماہانہ کثیر زرمبادلہ بیرون ملک سے پاکستان لاتے ہیں، ان ان کا کہنا تھا کہ ان نوجوانوں کی محنت کا صلہ محفوظ بنانے کے لیے پے پال یا ایسی کسی سروس کا ہونا ضروری ہے۔

اسد عمر کا کہنا تھا کہ اس وقت پاکستان میں باصلاحیت نوجوانوں کی ایک بڑی تعداد ہے جو گھر بیٹھے ماہانہ لاکھوں ڈالر کما کر ملک میں لاسکتی ہے لیکن انہیں بیرون ملک مقیم کلائنٹس سے لین دین کے لیے پے پال جیسے پلیٹ فارم کی ضرورت ہے۔

انہوں نے بتایا کہ وزارتِ آئی ٹی کو اس سلسلے میں احکامات جاری کیے گئے ہیں کہ آئندہ چار مہینے میں پے پال کی انتظامیہ کو قائل کیا جائے کہ وہ پاکستان جیسی وسیع مارکیٹ کو نظر انداز نہ کرے اور یا تو یہاں کام شرو ع کرے یا اس جیسا کوئی پلیٹ فارم تشکیل دینے میں مدد فراہم کرے۔

یاد رہے کہ آن لائن دنیا میں پے پال کو رقم کی لین دین کے حوالے سے ایک اہم مقام حاصل ہے۔ اس سروس کو تقریباً دو دہائیوں سے آن لائن رقوم کی ترسیل کا اہم طریقہ مانا جاتا ہے اور اس کے کروڑوں صارفین دنیا بھر کے درجنوں ممالک میں پھیلے ہوئے ہیں۔اس سروس کے ذریعے دنیا کے کسی بھی کونے میں رقم کی ترسیل نہایت آسان اور محفوظ طریقے سے کی جاسکتی ہے تاہم بد قسمتی سے یہ سروس اب تک پاکستان میں میسر نہیں ہے۔

خیال رہے کہ ماضی کی حکومتوں نے بھی پے پال کو پاکستان میں کام کرنے کی دعوت دی لیکن اس کے ساتھ کسی معاہدے کو حتمی شکل دینے میں ناکام رہے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں