The news is by your side.

Advertisement

شعیب اختر تنقید سے پہلے میرا ریکارڈ چیک کریں، اسد شفیق

کراچی : قومی ٹیسٹ ٹیم کے بلے باز اسد شفیق نے کہا ہے کہ کرونا وائرس ختم ہوجائے تو کھلاڑیوں کو ڈبل محنت کرنا پڑے گی، شعیب اختر کا میرے لیے دلیر نہ ہونے کا الزام لگانا درست نہیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی میں صحافیوں سے ویڈیو کانفرنس میں گفتگو کرتے ہوئے کیا، انہوں نے کہا کہ کیریئر میں اپنے مکمل اہداف حاصل نہیں کرسکا ہوں، ٹیسٹ کرکٹ میں زیادہ تر چھٹی پوزیشن پر کھیلنے کا موقع ملا، ایسی پوزیشن پر کھیلنے سے بڑی اننگز بنانا مشکل ہوجاتا ہے۔

اسد شفیق کا کہنا تھا کہ ابتدائی پوزیشن پر کھیلنے سے پرفارمنس اچھی رہی، مانتا ہوں نصف سنچری کو بڑی اننگز میں تبدیل نہیں کرسکا ہوں، مصباح اور یونس بھائی کی وجہ سے انڈو شیڈو نہیں رہا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ میرے لیے دلیر نہ ہونے کا الزام لگانا درست نہیں، شعیب اختر کئی مرتبہ میرے لیے ایسے الفاظ استعمال کرچکے ہیں، انہیں چاہئے کہ میرے کرکٹ ریکارڈ ضرور دیکھیں، اگر دلیر کھلاڑی نہ ہوتا تو آسٹریلیا، انگلیںڈ اور جنوبی افریقہ میں سنچری اسکور نہ کرپاتا۔

اسد شفیق کا کہنا تھا کہ چھوٹے قد کی وجہ سے مشکلات ہوتی تو ٹنڈولکر زائد سنچریاں نہ بناتے، سچن ٹنڈولکر اور محمد یوسف میرے پسندیدہ کھلاڑی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ لاک ڈاؤن کی صورتحال میں خاموشی سے مدد کررہا ہوں، ایسے کئی امپائرز اور اسکورر ہیں جو روزانہ کی بنیاد پر کماتے ہیں، رمضان کرکٹ کو اس مرتبہ کافی حد تک مس کیا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں