آئی ایم ایف کے پاس ضرور جارہے، لیکن قومی سلامتی پرسمجھوتا نہیں کریں گے: اسد عمر
The news is by your side.

Advertisement

آئی ایم ایف کے پاس ضرور جارہے ہیں، لیکن قومی سلامتی پرسمجھوتا نہیں کریں گے: اسد عمر

اسلام آباد: وفاقی وزیرخزانہ اسد عمر نے کہا ہے کہ ہم نے کبھی یہ دعویٰ نہیں کیا کہ آئی ایم ایف کے پاس نہیں جائیں گے.

ان خیالات کا اظہار انھوں نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا. ان کا کہنا تھا کہ پاکستان پہلے بھی 18 بار آئی ایم ایف پروگرام میں جاچکا ہے، 7 بار فوجی اور 11 بار سویلین حکومتیں آئی ایم ایف کے پاس گئیں.

پاکستان پہلے بھی 18 بار آئی ایم ایف پروگرام میں جاچکا ہے، 7 بار فوجی اور 11 بار سویلین حکومتیں آئی ایم ایف کے پاس گئیں

اسدعمر نے کہا کہ ملک کوہر ماہ دو ارب ڈالرز کے خسارے کا سامنا ہے، کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 18 ارب ڈالرز تک پہنچ چکا ہے.

وزیرخزانہ اسدعمر نے کہا کہ ایران پر پابندیوں کی وجہ سے تیل کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے، جس سے درآمدی بل میں خاطرخواہ اضافہ ہوگیا.

ان کا کہنا تھا کہ ن لیگ کی حکومت ڈھائی مہینے بعد ہی آئی ایم ایف کے پاس چلی گئی تھی، سعودی عرب، چین یا کسی دوست ملک نے قرضے کے لئےشرائط نہیں رکھیں.

مزید پڑھیں: وزیراعظم عمران خان کا حکومتی اقتصادی پالیسی پر مختلف طبقات کو اعتماد میں لینے کا فیصلہ

اسدعمرنے واضح‌ کیا کہ آئی ایم ایف کے پاس ضرور جارہے ہیں، لیکن قومی سلامتی پرسمجھوتا نہیں کریں گے، سی پیک کے قرضوں سے ہم پرکوئی اضافی بوجھ نہیں پڑا.

وزیرخزانہ اسدعمر کا کہنا تھا کہ سی پیک سے متعلق امریکی حکام کا بیان سراسرغلط ہے، ہمیں رواں سال قرضوں کی مد میں 9 ارب ڈالرز ادا کرنے ہیں.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں