The news is by your side.

Advertisement

امریکا کا پاکستان سے آسیہ بی بی کو رہا کرنے کا مطالبہ

واشنگٹن : امریکا نے پاکستان سے عیسائی خاتون آسیہ بی بی کو رہا کرنے کا مطالبہ کر دیا ہے۔امریکی محکمہ خارجہ کے خصوصی سفیر ڈیوڈ سپارسٹین کے مطابق امریکا اس معاملے پر پاکستان سے رابطے میں ہے۔

تفصیلات کے مطابق امریکا نے پاکستان سے توہین رسالت کے جرم میں قید آسیہ بی بی کی رہائی کا مطالبہ کر دیا ہے۔

امریکی محکمہ خارجہ میں مذہبی آزادی کے حوالے سے خصوصی سفیر ڈیوڈ سپارسٹین نے کہا ہے کہ آسیہ بی بی کے معاملے پرسابق وفاقی وزیر شہباز بھٹی اور گورنر سلمان تاثیر کو جان سے ہاتھ دھونا پڑے، تاہم مذہبی آزادی اور اقلیتوں کے حقوق کیلئے پاکستان کو آسیہ بی بی کو آزاد کرنا ہوگا۔

ڈیوڈ سپارسٹین خصوصی امریکی سفیر آسیہ بی بی وہی خاتون ہیں جن کے حق میں آواز اٹھانے پر سلمان تاثیر کو قتل کیا گیا۔ آسیہ بی بی کا مقدمہ اس وقت سپریم کورٹ میں زیر سماعت ہے.

آسیہ بی بی کی رہائی کیلئے نہ صرف امریکی محکمہ خارجہ بلکہ امریکی تھنک ٹینکس بھی میں مطالبہ کرتے نظر آرہے ہیں۔

آسیہ بی بی کو سن 2009 میں پاکستان میں اس وقت گرفتار کیا گیاجب کھیت میں کام کرتے ہوئے ان کی دیگر عورتوں سے ایک ہی برتن سے پانی پینے پر جھگڑا ہوا۔

جھگڑے کے بعد ان پر الزام لگایا گیا تھا کہ انہوں نے گستاخانہ کلمات کہے ۔ نومبر 2010 میں انہیں شیخوپورہ کے ایک عدالت نے موت کی سزا سنائی تاہم اب یہ معاملہ پاکستانی سپریم کورٹ میں زیر سماعت ہے۔

 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں