The news is by your side.

Advertisement

چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کے اعزاز میں الوادعی عشائیہ

اسلام آباد : سپریم کورٹ بار کی جانب سے چیف جسٹس سپریم کورٹ آصف سعید کھوسہ کے اعزاز میں الوادعی عشائیہ دیا گیا۔

عشائیے میں سپریم کورٹ کے تمام جج صاحبان نے شرکت کی، اس موقع پر پرویزمشرف کیس کے فیصلے سے اختلاف کرنے والے جسٹس نذیر اکبر بھی موجود تھے، تقریب میں پراسیکیوٹر اکرم شیخ اور بار کے تمام ممبران وسینئر وکلا نے بھی شرکت کی۔

اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اکرم شیخ ایڈووکیٹ نے کہا کہ کسی بھی عدالت کا فیصلہ اپیل کی صورت میں تبدیل ہوسکتا ہے جبکہ عدالتی فیصلہ ریفرنس کی صورت میں تبدیل نہیں ہوسکتا۔

واضح رہے کہ چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس جناب آصف سعید کھوسہ منصفِ اعلیٰ کے منصب پر347 دن فائزرہنے کے بعد کل 20دسمبر بروز جمعہ کو ریٹائر ہوجائیں گے۔

جسٹس آصف سعید کھوسہ نے1969میں میٹرک کے امتحان میں ملتان بورڈ سے پانچویں جبکہ 1971 میں انٹرمیڈیٹ میں لاہور بورڈ اور 1973 میں پنجاب یونیورسٹی سے پہلی پوزیشنز حاصل کیں اور اسی یونیورسٹی سے 1975 میں ماسٹر کی ڈگری حاصل کی، انہیں تین بار نیشنل ٹیلنٹ اسکالرشپ سے نوازا گیا۔

کیمبرج یونیورسٹی برطانیہ سے 1977 اور 1978 میں انہوں نے قانون کی دو ڈگریاں حاصل کیں، تعلیم حاصل کرنے کے بعد وہ 1979میں ملک واپس آئے اور لاہور ہائی کورٹ سے وکالت کا آغاز کیا اور 1985 میں سپریم کورٹ کے وکیل کا درجہ ملا 1998میں لاہور ہائی کورٹ جبکہ 2010 میں سپریم کورٹ کے جج منتخب ہوئے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں