اوباما انتظامیہ نے اہم مواقع ضائع کیے‘ آصف زرداری -
The news is by your side.

Advertisement

اوباما انتظامیہ نے اہم مواقع ضائع کیے‘ آصف زرداری

واشنگٹن: سابق صدرآصف علی زرداری نے امریکی اخبارکوانٹرویو دیتے ہوئےکہا کہ وائٹ ہاوس کے نئے مکین ڈونلڈ ٹرمپ کو دہشت گردتنظیموں اورپاک بھارت کشیدگی جیسے مسائل کاسامناہے، جن سے نمٹنے کے لئے انہیں موثرحکمت عملی بنانا ہوگی.

تفصیلات کے مطابق سابق صدرآصف علی زرداری نے امریکی اخبارکوانٹرویو دیتے ہوئے وائٹ ہاوس کے نئے مکین ڈونلڈٹرمپ کو مشورہ دیا کہ وہ جنوبی ایشیا کیلئےاعلیٰ سطح کا نمائندہ مقررکریں تاکہ جنوبی ایشیا سے ان کے روابط زیادہ پائیدار ہوسکیں.

سابق صدر کا کہنا تھا کہ ڈونلڈٹرمپ پرتنقیدکےبجائےانہیں کام کاموقع دیناچاہیےانہوں نے کہا کہ ٹرمپ کے ناقدین کوکم ازکم90دن ان کےکام کاجائزہ لیناچاہیے، اس کے بعد ان کے کام پر تنقید یا تعریف کرنی چاہیئے.

آصف زرداری کا امریکی اخبارکوانٹرویو دیتے ہوئے کہنا تھا کہ ٹرمپ کودہشت گردتنظیموں اورپاک بھارت کشیدگی کاسامناہے، جس سے نمٹنے کے لئے انہیں موثر حکمت عملی بنانا ہوگی.

ایک سوال کے جواب میں سابق صدر پاکستان آصف زرداری نے کہا کہ سابق امریکی صدر اوباما اور ان کی انتظامیہ نے دہشتگردی سے مؤثراندازمیں نمٹنےکاموقع ضائع کیا، انہوں نے کہا کہ اگر سابق امریکی صدر نےمؤثرحکمت علمی بنائی ہوتی تو وہ بہت کامیاب طریقے سے عالمی دیشتگردی کا مقابلہ کر سکتے تھے۔

امریکی اخبارکوانٹرویو دیتے ہوئے سابق صدرپاکستان آصف زرداری کا کہنا تھا کہ اوبامہ انتظامیہ نے موثرحکمت عملی نہ ہونے کی وجہ سے اہم مواقع ضائع کیے.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں