The news is by your side.

عمران خان پر قاتلانہ حملہ، پنجاب حکومت کا بڑا فیصلہ

لاہور: محکمہ پراسیکیوشن نے سابق وزیر اعظم عمران خان پر قاتلانہ حملہ کیس کی پیروی کے لیے پراسکیوٹرز کی خصوصی ٹیم تشکیل دے دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پراسیکیوٹر جنرل پنجاب نے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان پر قاتلانہ حملے کیس میں پیروی کیلئے تین رکنی ٹیم تشکیل دی ہے۔

تحریک انصاف کے آزادی مارچ پر فائرنگ کا ٹرائل انسداد دہشتگردی کی خصوصی گوجرانوالہ میں کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: گورنر پنجاب کا صوبے میں گورنر راج لگانے کا عندیہ

تین رکنی ٹیم ڈپٹی پراسکیوٹر جنرل حافظ اصغر، رانا سلطان اور زاہد سرفراز پر مشتمل ہوگی، پراسکیوشن کی کمیٹی جے آئی ٹی اور تفتیشی افسر کو شواہد اکٹھے کرنے کے بارے میں معاونت کرے گی۔

کمیٹی انسداد دہشت گردی عدالت گوجرانولہ میں پیش کر ملزم کے ریمانڈ اور ٹراٸل میں پراسیکیوشن کی نماٸندگی کرے گی۔

گذشتہ روز چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان پر ہونے والے قاتلانہ حملے کی ایف آئی آر درج کی گئی تھی، جس کیلئے درمیانی راستہ اختیار کیا گیا۔

پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ مذکورہ مقدمہ تھانہ سٹی وزیر آباد میں درج کیا گیا، مقدمے میں قتل، اقدام قتل سمیت دہشت گردی کی دفعات شامل کی گئی۔

قاتلانہ حملے کی ایف آئی آر میں گرفتار ملزم نوید کو نامزد کیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں