The news is by your side.

Advertisement

یورپی ممالک کا آکسفورڈ آسٹرا زینیکا ويکسين سے متعلق اہم فیصلہ

برلن : آکسفورڈ کی کورونا ویکسین آسٹرا زینیکا کی عارضی معطلی کے بعد جرمنی اور فرانس نے دوبارہ ویکسی نیشن کا باقاعدہ آغاز کردیا ہے، اٹلی نے بھی ویکیسن کے استعمال کا فیصلہ کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق آسٹرا زینیکا کی ویکسین سے ہونے والے سائیڈ افیکٹ کی وجہ ہونے والی عارضی معطلی کے بعد جرمنی اور فرانس ميں ايسٹر زينيکا ويکسين لگانے کا عمل دوبارہ شروع کردیا گیا۔

گزشتہ روز يورپی ميڈيسن ايجنسی کی جانب سے آسٹرا زینیکا کو محفوظ اور قابل استعمال قرار ديے جانے کے بعد فرانس، جرمنی اور کئی ديگر رياستوں نے ويکسين مہمات دوبارہ شروع کرنے کا کہا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق دنیا کے بیشتر ممالک ميں کورونا وائرس متاثرین کی تعداد میں ایک بار پھر تيزی سے اضافہ ہورہا ہے جس کے سد باب کیلئے ڈبلیو ایچ او سمیت دیگر ادارے اپنی کوششوں میں مصروف ہیں۔

جرمنی اور فرانس ميں کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے ايسٹرا زينيکا ويکسين مہم معمولی تعطل کے بعد آج جمعے سے دوبارہ سے شروع کی جا رہی ہے۔ جبکہ اٹلی 24 گھنٹوں کے اندر اندر آسٹرا زینیکا ویکسین دوبارہ استعمال شروع کر دے گا۔

اٹلی کے وزیر اعظم ماریو ڈراگی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ حکومت کی ترجیح ہے کہ کم سے کم وقت میں لوگوں کو زیادہ سے زیادہ ویکسین دی جائے، اٹلی کی ادویات ایجنسی آئیفا پہلی ایجنسی ہے جس نے ویکسین پر عائد پابندی ختم کی۔

اس کے علاوہ اسپين، اٹلی، ہالينڈ، پرتگال، لتھوينيا، سلوينيا اور بلغاريہ نے بھی تصديق کر دی ہے کہ عوام کوآسٹرا زینیکا کے ٹيکے لگانے کا عمل جلد بحال کر ديا جائے گا۔

فرانسيسی وزير اعظم کے دفتر کی جانب سے بھی آج تصديق کی گئی ہے کہ انہيں جمعے کو آسٹرا زینیکاکی ويکسين لگائی جا رہی ہے۔

مزید پڑھیں : آکسفورڈ کی آسٹرازینیکا ویکسین محفوظ اور مؤثر قرار

یاد رہے کہ یوروپی میڈیسن ایجنسی (ای ایم اے) نے ہنگامی تحقیقات کے بعد جمعرات کو یہ نتیجہ اخذ کیا کہ آکسفورڈ یونیورسٹی میں تیار کی جانے والی ویکسین آسٹرا زینیکا ایک محفوظ اور مؤثر ویکسین ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں