یورپ میں شدید سردی کی لہر‘ہلاکتوں کی تعداد23ہوگئی -
The news is by your side.

Advertisement

یورپ میں شدید سردی کی لہر‘ہلاکتوں کی تعداد23ہوگئی

وارسا: یورپ کے مختلف ممالک میں شدید سردی کےباعث تارکین وطن اور بےگھر لوگوں سمیت23 افراد ہلاک ہوگئے۔

تفصیلات کےمطابق یورپ کے مختلف ممالک میں شدید سردی کی لہررواں ہفتے کے اختتام تک جاری رہنے کا امکان ہے۔

اٹلی میں بحری اور فضائی سفر کی سہولیات تعطل کا شکار ہوئی ہیں جبکہ جنوبی علاقوں میں اسکول بند کردیےگئےہیں۔

c1

ترکی بھی سرد موسم سے بری طرح متاثر ہوا ہے۔ باسفورس کی بندرگاہ کو بھی استنبول میں برفانی طوفان کے بعد لنگر اندازی کے لیے بند کر دیا گیا ہے۔

c2

پولینڈ میں سردی کے باعث کم از کم 10 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔جہاں منجمند کردینے والی سردی مائنس 14 سینٹی گریڈ تک ریکارڈ کی گئی۔روس میں رات کے وقت درجۂ حرارت منفی 30 تک پہنچ چکا ہے۔

c3

یونان کے شمالی علاقوں میں درجۂ حرارت منفی 15 تک پہنچ گیا ہیں جہاں گذشتہ ہفتے ایک افغان پناہ گزین سردی کے باعث ہلاک ہو گیا تھا وہاں تمام سڑکیں بند ہیں۔

c4

اٹلی میں سات افراد کی ہلاک کے بعد بے گھر افراد کے لیے بنے ہاسٹلز دن رات کھلے ہیں۔ مرنے والوں میں پانچ افراد کھلے آسمان تلے ہلاک ہو ئے۔

c5

واضح رہےکہ روس میں 120 سال کے بعد اس قدر سردی پڑی ہے۔جہاں رات کے وقت درجۂ حرارت منفی 30 تک ریکارڈ کیاگیا ہے۔

c6

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں