The news is by your side.

Advertisement

پی آئی سی حملہ کیس ،وزیراعظم کے بھانجے کی عبوری ضمانت منظور

لاہور :انسداد دہشت گردی عدالت نے پی آئی سی حملہ کیس میں وزیراعظم کے بھانجے حسان نیازی کی عبوری ضمانت منظور کرتے ایک لاکھ کے مچلکے جمع کروانے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں انسداد دہشت گردی عدالت کے جج ارشد حسین بھٹہ نے پی آئی سی حملہ کیس میں وزیراعظم کے بھانجے حسان نیازی کی درخواست ضمانت پر سماعت کی، حسان نیازی سماعت کے موقع پر تاخیر سے پہنچے، جس پر عدالت نے ان کی عبوری ضمانت خارج کر دی۔

عدالت نے قرار دیا کہ وکیل ہونے کہ باوجود آپ تاخیر سے آئے، جس پر حسان نیازی نے غیر مشروط معافی مانگتے ہوئے عبوری ضمانت کیلئے نئی درخواست دائر کر دی۔

درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا تاخیر سے عدالت پہنچنے پر عبوری ضمانت خارج کی گئی، عدالت کےدروازےپرچیکنگ کے باعث تاخیر ہوئی، پی آئی سی حملہ کیس سے کوئی تعلق نہیں ہے، کسی بھی شخص کو اشتعال دلایا اور نہ ہی حملہ کیا۔

درخواست گزار نے استدعا کی عدالت عبوری ضمانت منظور کرکےگرفتاری سے روکنے کاحکم دے۔

عدالت نے درخواست کی سماعت کے بعد حسان نیازی کی چھ جنوری تک عبوری ضمانت منظور کرتے ہوئے ایک لاکھ کے مچلکے جمع کروانے کا حکم دیا جبکہ دیگر 9 وکلا کی ضمانتوں میں بھی چھ جنوری تک توسیع کر دی۔

دیگر ملزمان میں عبدالرحمان بٹ ، چوہدری مزمل ، سید زین ، اسامہ ، عمر غوری ، رانا عدیل ، سکندر صدیق ، عبدالماجد ، علی جاوید ملک شامل ہیں، ملزمان کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا تھا کہ ان کا ہی آئی سی حملہ.کیس سے کوئی تعلق نہیں ہولیس نے غیر قانونی طور ہر مقدمہ میں ملوث کیا لہذا عدالت ضمانت منظور کرے۔

یاد رہے ایک ویڈیو کے تنازع پر وکلا آپےسےباہرہوگئے تھے ،وکلاء کی بڑی تعداد نے پنجاب انسی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی پر دھاوا بول کر شدید توڑ پھوڑ کی تھی اور اسپتال کو بے پناہ نقصان پہنچایا تھا، پولیس نے سی سی ٹی وی فوٹیج اور دیگر فوٹیجز کی مدد سے حسان خان نیازی کی شناخت کی تھی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں