The news is by your side.

Advertisement

منظر امام قتل کیس، کالعدم تنظیم کے کارکن کو سزائے موت

کراچی: انسداد دہشت گردی کی عدالت نے ایم کیو ایم رہنما اور سابق رکن اسمبلی منظر امام قتل کیس کا جرم ثابت ہونے پر کالعدم تنظیم کے کارکن کو سزائے موت سنادی۔

تفصیلات کے مطابق انسداد دہشت گردی کی عدالت میں منظر امام قتل کیس کی سماعت ہوئی جس میں فریقین اور استغاثہ وکلا کے دلائل سننے کے بعد معزز جج نے فیصلہ سنایا۔

انسداد دہشت گردی کی عدالت نے قتل کا جرم ثابت ہونے پر کالعدم تنظیم کے کارکن عاشق کو سزائے موت اور 5 سال قید کی سزا سنائی علاوہ ازیں مجرم کو 4 لاکھ جرمانہ ادا کرنے کا بھی حکم دیا۔

مزید پڑھیں: پیر آباد پولیس کی کارروائی، رکن اسمبلی منظرامام کا قاتل گرفتار

واضح رہے کہ جنوری 2013 میں کراچی کے علاقے اورنگی ٹاؤن میں گھات لگائے دہشت گردوں نے کے متحدہ قومی موومنٹ کے رکن سندھ اسمبلی سید منظر امام کی گاڑی پر فائرنگ کی تھی جس کے نتیجے میں دو محافظ اور وہ جاں بحق ہوگئے تھے۔

خیال رہے کہ ایس ایس پی سینٹرل ڈاکٹر رضوان نے رواں برس 12 اپریل کو دعویٰ کیا تھا کہ پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے اورنگی ٹاؤن سے ایم کیو ایم لندن کے ٹارگٹ کلر کو گرفتار کیا جو منظر امام سمیت 19 افراد کے قتل میں ملوث ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں