site
stats
پاکستان

بانی ایم کیو ایم کے وارنٹ گرفتاری جاری‘ عدالت میں پیش کرنے کا حکم

کراچی: انسداد دہشت گردی کی عدالت نے ایک بار پھر بانی ایم کیو ایم اور ایم پی اے عدنان احمد سمیت 200 افراد کے وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے، اے ٹی سی نے پولیس کو ہدایت کی کہ ملزمان کو 6 مارچ کو عدالت کے روبرو پیش کیا جائے.

تفصیلات کے مطابق انسداد دہشت گردی کی عدالت میں سانحہ 12 مئی اوراشتعال انگیز تقریرکے 4 مقدمات کی سماعت ہوئی، جس میں ایم کیوایم لندن کےحسن ظفر،ساتھی اسحاق،امجداللہ،محفوظ یار سمیت 20 سے زائد ملزمان عدالت میں پیش ہوئے.

دوران سماعت میں ایک اورمقدمے میں بانی ایم کیوایم اورایم پی اےعدنان احمد سمیت 200 افراد کے وارنٹ جاری کیے گئے ہیں، واضح رہے مفرورملزمان میں خالد مقبول، رشید گوڈیل، کیف الوریٰ،سلمان مجاہد سمیت دیگراہم نام شامل ہیں.

انسداد دہشت گردی عدالت نے ایئرپورٹ اورسچل پولیس کو ہدایت کی کہ ملزمان کوگرفتارکرکے 6 مارچ کوعدالت میں پیش کیا جائے ۔

دوسری جانب میئرکراچی وسیم اختر کی مقدمات میں حاضری سےاستثنیٰ کی درخواست منظورہوچکی ہے، جبکہ وسیم اختر سمیت ،رؤف صدیقی،خواجہ اظہار،ساتھی اسحاق،محفوظ یارخان ضمانت پرہیں.

یاد رہے سانحہ بارہ مئی2007 میں‌ پیش آیا تھا، اس وقت کے صدر جنرل پرویز مشرف کو عدلیہ کی بحالی کی تحریک کا سامنا تھا۔ 12 مئی کو معزول چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کی کراچی آمد کے موقعے پر ان کی حمایت اور مخالفت میں ریلیاں نکالی گئی تھیں، اس موقع پر متحرک گروپوں میں تصادم ہوا جس میں 40 سے زیادہ افراد ہلاک اور 100 کے قریب زخمی ہوگئے تھے۔

مزید پڑھیں:سانحہ 12 مئی ایم کیو ایم کی مقبولیت کو ختم کرنے کی سازش تھی، فاروق ستار

مبینہ طور پر سانحہ 12 مئی کا الزام متحدہ قومی موومنٹ پر عائد کیا جا رہا ہے، جس پر سربراہ ایم کیو ایم پاکستان کا کہنا ہے کہ سانحہ بارہ مئی ایم کیو ایم کے خلاف پروپیگنڈہ ہے.

مزید پڑھیں:سانحہ 12 مئی کیس: عدالت کی وسیم اختر کو جیل سے کام کرنے کی ہدایت

گذشتہ سال مئیر کراچی وسیم اختر کو اسی کیس میں گرفتار بھی کیا گیا تھا تام دو ماہ بعد ان کی رہائی عمل میں‌ آئی تھی.

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top