site
stats
پاکستان

انسداد دہشت گردی کی عدالت نےعبید کے ٹو اورسعید بھرم کو بری کردیا

کراچی : انسداد دہشت گردی کی عدالت نے جیل سپرنٹنڈنٹ امان اللہ نیازی سمیت 6 اہلکاروں کے قتل کیس میں ملوث ملزمان کو عدم ثبوت کی بنیاد پرباعزت بری کردیا۔

تفصیلات کے مطابق انسداد دہشت گردی کی عدالت میں جیل سپرنٹنڈنٹ امان اللہ نیازی سمیت 6 پولیس اہلکاروں کے قتل کیس کی سماعت ہوئی سماعت کے دوران پولیس ملزمان کے خلاف کوئی بھی ثبوت فراہم نہیں کرسکی جس کے باعث عدالت نے ملزمان کو بری کردیا۔

اس مقدمے سے بری ہونے والے عبید کےٹو، سعیدبھرم، چوہدری سجاد اور تنویر چاند کا تعلق ایم کیو ایم ہے جب کہ اس سے قبل عدالت ابوعرفان اور فیصل خواجہ کوبھی عدم ثبوت پربری کرچکی ہے۔

پولیس کا دعوی تھا کہ ملزمان نے 2006 میں سابق جیلرامان اللہ نیازی سمیت 6 پولیس اہلکاروں کو قتل کیا تھا جب کہ امان اللہ نیازی کوجیل میں صولت مرزاکوسہولت نہ دینے پرقتل کیا گیا تھا۔

خیال رہے اس مقدمےمیں ایم کیو ایم کے 10 کارکنان کو عدالت اشتہاری قرار دے چکی ہے جو اب تک قانون کی گرفت سے باہر ہیں۔

یاد رہے اس مقدمے سے بری ہونے والے عبید کے ٹو و دیگر کو ایم کیو ایم کے مرکز نائن زیرو پر رینجرز کے چھاپے کے دوران حراست میں لیا گیا تھا جب کہ سعید بھرم کو دبئی سے گرفتار کر کے کراچی لایا گیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top