The news is by your side.

Advertisement

افغانستان: طالبان کے دو دہشت گرد حملے، سکیورٹی فورسز سمیت 5 افراد جاں بحق

کابل: افغانستان میں طالبان کی جانب سے دو مختلف دہشت گرد حملوں کے نتیجے میں سکیورٹی اہلکاروں سمیت پانچ افراد جاں بحق ہوئے۔

تفصیلات کے مطابق افغانستان حالیہ چند ہفتوں سے عسکریت پسندوں کے دہشت گردانہ حملوں کے نشانے پر ہے، گذشتہ روز بھی یکے بعد دیگرے دو دہشت گرد حملے کیے گئے تھے جس کے نتیجے میں درجنوں افراد اپنی زندگی کی بازی ہار گئے تھے۔

افغان حکام کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ شدت پسندوں نے افٖغانستان کے دو صوبوں پر حملے کیے جن میں صوبہ بادغیس اور صوبہ غور شامل ہے، تاہم اس حملوں میں کم از کم پانچ افراد جاں بحق ہوئے ہیں جبکہ ان ہلاک شدگان میں دو پولیس اہلکار اور ایک قبائلی لیڈر بھی شامل ہے۔


افغان صوبے غزنی میں طالبان کا حملہ، افسران سمیت 14 پولیس اہلکار ہلاک


واقعے سے متعلق سکیورٹی حکام کا کہنا تھا کہ عسکریت پسندوں نے جن دو پولیس اہلکاروں کو ہلاک کیا ہے، وہ صوبہ بادغیس میں قائم ایک چیک پوسٹ پر ڈیوٹی سرانجام دے رہے تھے۔

سکیورٹی حکام کا مزید کہنا تھا کہ وسطی افغان صوبے غور میں طالبان عسکریت پسندوں کے حملے میں تین شہری ہلاک ہوئے، جبکہ ان میں ایک قبائلی رہنما بھی شامل ہے، تاہم علاقے میں طالبان کے مزید حملوں کو ناکام بنا دیا گیا ہے۔


افغانستان میں دھماکہ، 16 افراد جاں بحق، 38 زخمی


خیال رہے کہ گذشتہ روز افٖغانستان کے صوبے غزنی میں طالبان عسکریت پسندوں نے متعدد حملے کر کے 14 پولیس اہلکاروں کو موت کے گھاٹ اتار دیا تھا جبکہ متعدد زخمی بھی ہوگئے تھے۔

علاوہ ازیں گذشتہ روز ہی افغانستان کے شہر قندھار میں مکینک ورک شاپ پر ایک زور دار دھماکہ ہوا تھا جس کے نتیجے میں 16 عام شہری مارے گئے تھے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں