کتابیں پڑھنے کا وقت نہیں‌ ملتا؟ تو پریشانی کیسی، آڈیو بکس حاضر ہیں audio books
The news is by your side.

Advertisement

مطالعے کا وقت نہیں‌ ملتا؟ پریشان مت ہوں، آڈیو بکس حاضر ہیں

عام شکایت ہے کہ کتب بینی کا چلن کم ہوتا جارہا ہے، لوگ اب مطالعہ نہیں کرتے، کتابوں کی فروخت میں واضح کمی آئی ہے۔

اعدادوشمار ایک حد تک اس گھٹتے رجحان کی تصدیق کرتے ہیں، البتہ اس کے اسباب بھی ہیں۔ میڈیا اور سوشل میڈیا کا بڑھتا دائرہ اثر ایک اہم وجہ ہے۔

یہ سچ ہے کہ سوشل میڈیا کی سرگرمیاں اور سنیما، ٹی وی اور تھیٹر جیسے تفریح کے ذرایع ہمارا خاصا وقت نگل لیتے ہیں، پیشہ ورانہ مصروفیات اور زندگی کی تیزرفتاری کو بھی نظرانداز نہیں کیا جاسکتا۔

ایک اہم وجہ کتابوں کی خریدی پر آنے والے خرچے کے ساتھ ساتھ انھیں پڑھنے کے لیے درکار صبر اور یکسوئی بھی ہے۔

ایسے میں آڈیو بکس یا صوتی کتب اس مسئلے کا جامع حل پیش کرتی ہیں۔ ٹیکنالوجی کے طفیل آپ اب کتابیں ڈرائیورنگ کرتے ہوئے، کھانا پکاتے، یہاں تک کہ ٹیسٹ میچ دیکھتے ہوئے بھی سن سکتے ہیں۔

ورزش کرتے ہوئے جین اسٹن کے تکبر و تعصب، بس میں سفر کرتے ہوئے گارسیا مارکیز کے تنہائی کے سو سال اور استری کرتے ہوئے اورحان پامک کے مائی نیم از ریڈ جیسے ناولز کا پڑھنا ان ہی آڈیو بکس کے ذریعے ممکن ہے۔

ایک تجزیے کے مطابق آڈیو بکس سننے کے رجحان میں گذشتہ بیس برس میں خاصا اضافہ ہوا ہے، جس کی وجہ سے اس شعبے نے باقاعدگی انڈسٹری کی شکل اختیار کر لی ہے۔

برطانوی خبر رساں ادارے نے اپنی رپورٹ میں صوتی کتب سے وابستہ بارہ فوائد کا ذکر کیا ہے، جیسے آپ دیگر کام کرتے ہوئے صوتی کتابیں سن سکتے ہیں، یہ اچھے صداکاروں کی آواز میں ریکارڈ کی جاتی ہیں، جن کی مہارت  ان کتب کا لطف دوبالا کر دیتی ہے۔

یہ کتابیں ہینڈز فری ہوتی ہیں، یوں بزرگ بھی ان سے استفادہ کرسکتے ہیں، یہ اچھی صحبت فراہم کرتی ہی، ان کی مدد سے بیزار کن کام بھی دلچسپ ہو جاتے ہیں، یہاں وغیرہ وغیرہ۔

الغرض اگر آپ کو یہ قلق ہے کہ آپ مصروفیات کے باعث کتابوں سے دور ہوگئے ہیں، تو فوری طور پر آڈیو بکس سے رجوع کیجیے، ایسی بہت سے ویب سائٹس موجود ہیں، جو یہ سروس بلامعاوضہ فراہم کرتی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں