آسٹریلیا نے بدھا کا ’گندھارا مجسمہ‘ پاکستان کو واپس کردیا
The news is by your side.

Advertisement

آسٹریلیا نے بدھا کا ’گندھارا مجسمہ‘ پاکستان کو واپس کردیا

کینبرا: آسٹریلین شہری نے بدھا کا گندھارا مجسمہ پاکستان کو واپس کرکے اچھی روایت قائم کردی۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق بدھا کا گندھارا مجسمہ واپس کرنے کے لیے کینبرا کے پاکستانی ہائی کمیشن میں تقریب کا انعقاد کیا گیا۔

تقریب میں سول سوسائٹی، وزراء کے اہلخانہ، یوتھ، کمیونٹی سروسز سمیت میڈیا نمائندوں کو مدعو کیا گیا تھا۔

رپورٹ کے مطابق آسٹریلوی خاتون رومی ڈنگل کی والدہ 1970 کے اوائل میں گندھارا مجسمہ آسٹریلیا لائی تھیں، ان کے اہل خانہ نے فیصلہ کیا کہ مجسمہ پاکستان کو تحفے کے طور پر پیش کیا جائے تاکہ اسے اس کی اصل جگہ پر پہنچایا جاسکے۔

پاکستانی ہائی کمشنر بابر امین نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گندھارا مجسمہ ثقافتی تاریخ اور پاکستان کی ورثہ کا اہم عنصر ہے، یہ تحفہ پاکستان کے لیے مجسمے سے بہت بڑھ کر ہے۔

مزید پڑھیں: شاہراہ ریشم پرسفرکرتی گندھارا تہذیب

بابر امین نے اہل خانہ کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ یہ تحفہ پاکستان کے لیے بہت اہمیت کا حامل ہے، اس مجسمہ آرٹ کے شوقین افراد کی معلومات میں بھی اضافہ ہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ میں جانتا ہوں کہ عوام کو اس کی قدرو قیمت کا اندازہ ہوگا، یہ پاکستان کی تاریخ کا ایک حصہ ہے جس کا تعلق پوری دنیا میں رہنے والے افراد سے ہے۔

رپورٹ کے مطابق تحقیق کی گئی جس کے بعد پتا چلا کہ یہ مجسمہ پشاور کے علاقے میں موجود سوات وادی سے لایا گیا ہے۔

واضح رہے کہ مجسمہ سازی گندھارا آرٹ سے متاثر ہو کر شروع کی گئی۔ گندھارا آرٹ وہ آرٹ ہے جو بدھ مذہب کے ماننے والوں نے شروع کیا اور اسے ’بدھسٹ آرٹ‘ کہا جاتا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں