The news is by your side.

Advertisement

یہ کون ہوا سمندر میں رقصاں، دلچسپ ویڈیو وائرل

آسٹریلیا کے سمندر میں دیکھا گیا  انتہائی نایاب آبی مخلوق میں سے ایک ’’ رنگانگ بلینکیٹ آکٹوپس‘‘ جس کی حرکت پانی میں رقص کا دلفریب نظارہ پیش کررہی ہے

سمندر اپنے اندر بے پناہ قدرت کے شاہکار سموئے ہوئے ہے جن میں سے کئی منظر عام پر آچکے لیکن ابھی بہت سے قدرتی مظاہر انسانی آنکھوں سے پوشیدہ ہیں۔

ایسا ہی قدرت کا ایک شاہکار انتہائی نایاب رنگارنگ آکٹوپس جس کو بلینکیٹ آکٹوپس کا نام سے جانا جاتا ہے دیکھا میرین بائیولوجسٹ جیکنتا شیکلیتن نے لیڈی ایلیٹ جزیرے کے ساحل کے قریب بڑی چٹانوں کے درمیان۔

جیکنتا شیکلیتن کا کہنا ہے کہ جب میری پہلی نظر اس پر پڑی تو میں نے خیال کیا کہ یہ ایک بڑے پروں والی نوعمر مچھلی ہے لیکن جب ہمارے درمیان فاصلہ کم ہوا تو معلوم ہوا کہ یہ تو انہتائی نایاب مادہ بلینکیٹ آکٹوپس ہے ۔

میرین بائیولوجسٹ نے آسٹریلین جریدے سے گفتگو کرتے ہوئے جیکنتا شیکلیتین کا کہنا تھا کہ یہ منظر اسکے لیے انتہائی پرلطف اور دلچسپ تھا، میں بہت پرجوش تھی۔

ان کا کہنا تھا کہ میرے لیے مشکل تھا کہ سانسیں روکوں اور سمندر میں اتر کر اسکی ویڈیو بناؤں لیکن میں نے بنائی۔

شیکلیتن نے مادہ آکٹوپس کی ویڈیو اور تصویر اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر شیئر کی اور اس کے ساتھ لکھا کہ اس آکٹوپس کے رنگ ناقابل یقین حد تک دلکش تھے اور میرے لیے اسے دیکھنا زندگی کا ناقابل فراموش واقعہ ہے۔

واضح رہے کہ اس سے پہلے اکیس سال قبل ڈاکٹر جولین فن نے ایک نر بلینکیٹ آکٹوپس دیکھا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں