The news is by your side.

Advertisement

آسٹریلوی کھلاڑی عثمان خواجہ پاکستان آنے کے لیے بے چین!

پاکستانی نژاد آسٹریلوی کھلاڑی عثمان خواجہ کا کہنا ہے کہ میرا  کافی خاندان کراچی میں ہے، میں وہاں پیدا ہوا تو وہاں جانا ایک خاص لمحہ ہوگا۔

آسٹریلوی بیٹر عثمان خواجہ پاکستان میں پیدا ہوئے لیکن ان کا خاندان بعد میں آسٹریلیا منتقل ہوگیا شایہ یہی وجہ ہے  کہ انہیں اس دورے کا شدت سے انتظار ہے۔

عثمان خواجہ نے کرکٹ آسٹریلیا کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ میرا ابھی بھی کافی خاندان کراچی میں مقیم ہے میں وہیں پیدا ہوا تو وہاں جانا ایک اچھا اور خاص جذباتی لمحہ ہوگا۔

بیٹر کا کہنا تھا کہ اس دورے کے حوالے سے ان کی اپنی اہلیہ سے بھی بات چیت ہوتی رہتی ہے اور وہ کافی سمجھدار اور تعاون کرنے والی خاتون ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ آسٹریلیا کو پاکستان کا دورہ کیے ہوئے طویل عرصہ گزر چکا ہے، میرا خیال ہے کہ ہم آخری بار اس وقت وہاں گئے تھے جب مارک ٹیلر نے 334 رنز بنائے تھے اور یہ ایک طویل وقفہ ہے۔

 

واضح رہے کہ آسٹریلیا نے اپنا آخری دورہ پاکستان 1998 میں کیا تھا، اس کے بعد سیکیورٹی خدشات کے باعث آسٹریلیا نے پاکستان کا دورہ نہیں کیا۔

ان 24 سالوں کے دوران پاکستان نے آسٹریلیا کے خلاف اپنی چار ہوم سیریز  کھیلیں جو تمام نیوٹرل وینیو پر یو اے ای اور برطانیہ میں کھیلی گئیں۔

آسٹریلیا کے خلاف پاکستان نے یو اے ای کو اپنا ہوم گراؤنڈ 2009، 2012 اور 2014-15 کو بنایا جب کہ انگلینڈ کے میدانوں میں آسٹریلیا کے خلاف 2010 میں سیریز کھیلی۔

پاکستان کے آئندہ ماہ شروع ہونے والے دورے کے دوران آسٹریلیا کی ٹیم 3 ٹیسٹ، 3 ایک روزہ اور ایک ٹی ٹوئنٹی میچ کھیلے گی۔

شیڈول کے مطابق دونوں ٹیموں کے درمیان پہلا ٹیسٹ 4 سے 8 مارچ تک راولپنڈی میں، دوسرا میچ 12 سے 18 مارچ تک کراچی اور تیسرا وآخری ٹیسٹ میچ 21 سے 25 مارچ تک لاہور میں کھیلا جائے گا۔

ون ڈے سیریز 29 مارچ سے شروع ہوگی، تینوں میچ راولپنڈی اسٹیڈیم میں بالترتیب 29،31 مارچ اور 2 اپریل کو ہونگے، دورے کا اختتام سیریز کے واحد ٹی ٹوئنٹی میچ سے ہوگا جو 5اپریل کو پنڈی اسٹیڈیم میں ہی منعقد ہوگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں