مدعی نے خاندانی نام زیبرا رکھنے کی قانونی جنگ جیت لی -
The news is by your side.

Advertisement

مدعی نے خاندانی نام زیبرا رکھنے کی قانونی جنگ جیت لی

وینا: آسٹریا کے رہائشی نے اپنا خاندانی نام تبدیل کر کے زیبرا رکھنے کی قانونی جنگ جیت لی۔

برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق اس شخص نے آسٹریا کی عدالت میں ماتحت عدلیہ کے اس فیصلے کے خلاف اپیل دائر کی تھی جس میں ان کا خاندانی نام تبدیل کرنے کی استدعا کو رد کر دیا گیا تھا۔

خبررساں ادارے اے ایف پی کے مطابق اس شخص کے دادا نے 1950ء کی دہائی میں اپنا نام تبدیل کر کے زیبرا رکھا تھا۔ آسٹریا کی آئینی عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا کہ زیبرا کئی دہائیوں سے اس خاندان کا نام ہے۔

ماتحت عدلیہ نے اپنے فیصلے میں کہا تھا کہ زیبرا آسٹرین نام نہیں ہے جس پر عدالت نے فیصلے میں کہا تھا کہ زیبرا ایک ایسا گھوڑا ہے جو افریقا میں پایا جاتا ہے۔

اس شخص کے خاندان میں آخری فرد جس کا نام زیبرا تھا ان کی موت 1991ء میں ہوئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں