The news is by your side.

Advertisement

’پارٹی پر مشکل وقت آیا تو حامد خان کو لیڈر کے ساتھ کھڑا نہیں پایا‘

اسلام آباد: پی ٹی آئی کے بانی رکن حامد خان کو شو کاز نوٹس بھیجے جانے کے معاملے پر پارٹی رکن عون چوہدری نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ہے کہ جب پارٹی پر مشکل وقت آیا تو حامد خان کو لیڈر کے ساتھ کھڑا نہیں پایا۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی رکن عون چوہدری نے حامد خان سے متعلق ایک ٹویٹ میں کہا کہ حامد خان پی ٹی آئی کا نہیں بلکہ وکلا رہنما کہلوانا پسند کرتے ہیں، حامد خان صاحب اس وقت کہاں تھے جب دھرنا، لاک ڈاؤن جاری تھا، مشکل وقت آیا تو وہ لیڈر کے ساتھ کھڑے نہیں ہوئے۔

عون چوہدری نے ٹویٹ میں لکھا کہ کوئی بھی رکن پارٹی ڈسپلن توڑنے کا مجاز نہیں ہو سکتا، پارٹی ڈسپلن کی خلاف ورزی پر شو کاز نوٹس کا جواب دینا پڑے گا، پاکستان تحریک انصاف چیئرمین عمران خان کا نظریہ ہے، جو بھی چیئرمین کے نظریے کے خلاف ہے، وہ پارٹی کا وفادار نہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  تحریک انصاف کا اپنے اہم رہنما کیخلاف بڑا ایکشن

یاد رہے کہ یکم دسمبر کو تحریک انصاف نے معروف قانون دان ایڈوکیٹ حامد خان کی بنیادی رکنیت معطل کر دی تھی۔ حامد خان پر جھوٹے بیانات کے ذریعے پارٹی کو بد نام کرنے کا الزام عائد کیا گیا تھا، انھیں پارٹی مخالف بیانات پر شوکاز نوٹس بھی جاری کیا گیا ہے، جس میں کہا گیا ہے کہ حامد خان نے الیکٹرانک اور پرنٹ میڈیا میں من گھڑت بیانات دیے، جواب نہ دینے کی صورت میں انھیں پارٹی سے بے دخل کیا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں