The news is by your side.

Advertisement

ایازصادق نے اسپیکر کے عہدے کے لئے واضح حمایت حاصل کرلی

اسلام آباد: مسلم لیگ ن کے رہنماء ایازصادق اسپیکرقومی اسمبلی کے انتخابات کے لئے پیپلزپارٹی اور جماعت اسلامی کی حمایت حاصل کرلی ہے جبکہ متحدہ قومی موومنٹ بھی حمایت کے معاملے پر مشاورت کررہی ہے۔

ایاز صادق این اے 122 سے قومی اسمبلی کے رکن منتخب ہوئے تھے اورالیکشن ٹربیونل کے فیصلے کے تحت انہیں نا اہل قرار دیا تھا تاہم گزشتہ ماہ ہونے والے ضمنی انتخابات میں ایاز صادق تحریک انصاف کے امیدوار علیم خان کو شکست دے کر ایک بار پھر ممبر قومی اسمبلی منتخب ہوگئے۔

وزیراعظم نواز شریف نے مسلم لیگ ن کے رہنما ایاز صادق کو ایک بار پھراسپیکرکے عہدے کے انتخابات کے لئے نامزد کردیا ہے۔

ایاز صادق اسپیکر قومی اسمبلی کے انتخاب کے لئے پیپلز پارٹی اور جماعت اسلامی  کی حمایت حاصل کرلی ہے جبکہ  متحدہ قومی موومنٹ حمایت کے معاملے پر مشاورت کررہی ہے۔

ایاز صادق نے آج اسپیکر کے انتخاب میں حمایت حاصل کرنے کے لئے فاٹا سے تعلق رکھنے والے اراکینِ قومی اسمبلی سے بھی ملاقات کی جس کے بعد فاٹا اراکین نے مشروط طور پراپنے امیدوار جی جی جمالی کو ایازصادق کے حق میں دست بردارکرانے کا فیصلہ کیا ہے۔

فاٹا اراکین کا مطالبہ ہے کہ وزیراعظم 16 نومبر سے قبل فاٹا آکر وہاں کے عوام کے حقوق تفویض کرنے کا اعلان کریں۔

پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے شفقت محمود کواسپیکر قومی اسمبلی کے انتخاب کے لئے نامزد کیا گیا ہے تاہم ایاز صادق کو واضح حمایت حاصل ہوجانے کے سبب تحریک انصاف کے امیدوارمقابلے میں سیاسی طور پر تنہا رہ گئے ہیں۔

قومی اسمبلی کا اجلاس کل بروز پیر صبح نو بجے شروع ہوگا جس میں اسپیکر کے عہدے کے لئے رائے شماری کی جائے گی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں