site
stats
پاکستان

ایان علی کا نام دوبارہ ای سی ایل میں ڈالنے پرسپریم کورٹ برہم

اسلام آباد : ماڈل گرل ایان علی کا نام دوبارہ ای سی ایل میں ڈالنے پر سپریم کورٹ کے جج برہم ہوگئے، جسٹس شیخ عظمت سعید نےریمارکس دیئے ہیں کہ کیا ایان علی دہشت گرد ہیں؟

تفصیلات کے مطابق ایان علی کا نام دوبارہ ای سی ایل میں ڈالنے پرسپریم کورٹ کے جج جسٹس شیخ عظمت سعید نے اٹارنی جنرل کونوٹس جاری کردیا۔

جسٹس عظمت سعید نےکہا کہ بتایا جائے کہ نام ای سی ایل میں کس بنیاد پر ڈالا گیا؟ انہوں نے سوال کیا کہ کیا ایان علی دہشت گردہیں؟

سرکاری وکیل نےعدالت کو بتایا کہ ایان علی قتل کی ایک ایف آئی آرمیں نامزد ہیں۔ عدالت نے برہمی کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ کیا پنجاب میں درج قتل کی ہر ایف آئی آر کےملزمان کانام ای سی ایل میں ڈالا گیا؟

کیا ایف بی آر نے جن کو ٹیکس ادائیگی کےنوٹس دیئے۔ ان سب کےنام ای سی ایل میں ڈالےگئے؟ جسٹس شیخ عظمت سعید نےکہا کہ عدالت کو اپنے احکامات پرعمل کروانا آتا ہے کیوں نہ سیکرٹری داخلہ کوجیل بھیج دیں۔

معززجج کا کہنا تھا کہ احکامات پرعمل نہیں ہوگا تو عدالت کو تالا لگا کرگھر نہیں چلےجائیں ؟ عدالت نے رپورٹ طلب کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت جون کے آخری ہفتے تک ملتوی کردی۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز منی لانڈرنگ کیس کی ملزمہ ایان علی نے بیرون ملک روانگی کے حوالے سے سپریم کورٹ میں جواب جمع کرایا تھا۔

وزارت داخلہ کے خلاف درخواست میں ائیرپورٹ پر بار بار روکے جانے پرایان علی نے حکومتی اقدامات کو بدنیتی قرار دیا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ واضح عدالتی احکامات کے باجودبیرون ملک جانے سے روکاجارہا ہے۔ ایان علی نے عدالت سے شکوہ کرتے ہوئے کہا کہ ائیر پورٹ حکام نے کوئی خط  دکھایا نہ آرڈر پھر بھی بورڈنگ پاس جاری کرنے سے انکارکردیا ۔

 

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top