The news is by your side.

Advertisement

این سی او سی نے آزادکشمیر انتخابات مؤخر کرنے کی تجویز دیدی

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) نے 2 ماہ کے لیے آزادکشمیر انتخابات مؤخر ‏کرنےکی تجویز دے دی۔

این سی او سی اعلامیہ کے مطابق الیکشن کے دوران بڑے پیمانے پر سیاسی اجتماعات ہوتے ہیں ‏الیکشن سرگرمیوں سے کورونا کے پھیلاؤ کا خطرہ ہے ماضی میں آزادکشمیر میں کورونا بلندترین ‏سطح پر ریکارڈ کیا گیا۔

این سی اوسی کا کہنا ہے کہ جولائی میں الیکشن کاانعقاد کورونا پھیلاؤ کی بڑی وجہ بن سکتا ہے، ‏ویکسی نیشن مہم کے باعث آزادکشمیر انتخابات 2ماہ کیلئے موخر کیےجائیں، 2ماہ کےدوران ‏آزادکشمیر میں بڑے پیمانے پر ویکسی نیشن کامنصوبہ ہے۔

اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ کورونا کی تیسری لہر کو کامیابی کےساتھ نمٹا گیا ہے، پابندیوں کو ‏موجودہ حالات میں جاری رکھنےکا فیصلہ کیا گیا ہے، ملک بھرمیں کوروناویکسی نیشن اولین ترجیح ‏ہے آزادکشمیرمیں 1لاکھ 75ہزار افراد کی ویکسی نیشن کی جاچکی ہے اور ستمبر کے اختتام میں ‏‏10 لاکھ لوگوں کی ویکسی نیشن کاہدف مقرر ہے۔

دوسری جانب وزیراعظم آزاد کشمیر کا کہنا ہے کہ جب تک دونوں طرف حق خودارادیت ‏نہیں دی ‏جاتی، آزادکشمیر صوبہ نہیں بن سکتا۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان کا بطورچیئرمین پارٹی اختیار ہے وہ جوڑ توڑ کریں، بنی گالہ میں بیٹھ ‏‏کر آزادکشمیر کےالیکشن نہیں جیتے جاسکتے اور نہ ہی آزاد کشمیر کے لوگوں کےفیصلے کیے ‏‏جاسکتے ہیں۔

راجا فاروق حیدر نے کہا کہ این سی او سی کہتا ہے 2ماہ کےلیےالیکشن ملتوی کیے جائیں، بتا دینا ‏‏چاہتا ہوں یہ کوئی ضمنی الیکشن نہیں، آئین میں ہے جنگ کی صورت میں الیکشن ملتوی ‏‏کیےجاسکتےہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اب تو بارڈرز پر امن ہو چکا ہے میں کہتا تھا کشمیر کے معاملے پر میری سنی ‏‏جائے گی، الیکشن ملتوی کرانے یا نہ کرانے کا اختیار قانون ساز اسمبلی کے پاس ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں