The news is by your side.

Advertisement

وزیر صحت سندھ کا نگلیریا اور کانگو وائرس سے متعلق اہم بیان

کراچی: وزیر صحت سندھ عذرا فضل پیچوہو نے کہا ہے کہ ہر انسان کو اپنی حفاظت خود کرنی چاہیے.

ان خیالات کا اظہار انھوں نے کراچی میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا.  اس موقع پر انھوں نے کانگو  اور نگلیریا وائرس سے متعلق اہم انکشافات کیے۔

انھوں نے کہا کہ کانگو وائرس سے اب تک 29 افراد متاثر ہوئے ہیں، کانگو کے باعث 16 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں، لائیو اسٹاک نے جانوروں پراسپرےکی یقین دہانی کرائی تھی.

عذرا فضل پیچوہو نے کہا کہ نگلیریا کے اب تک 12کیسزرپورٹ ہوئے ہیں، لازم ہے کہ انسان خود بھی اپنی حفاظت کرے.

ڈائریا اور گیسٹرو کی وجہ مکھیوں کی بہتات ہے، روزانہ ہزاروں کی تعدادمیں بچے متاثر ہو رہے ہیں، ان مسائل سے نمٹنے کے لیے  ڈینگی اور ملیریا کے پروگرام کوایک کرنے جا رہے ہیں.

مزید پڑھیں: کراچی: کانگو وائرس سے متاثرہ ایک اور نوجوان ناظم آباد کے اسپتال میں داخل

 صوبائی وزیر نے کہا کہ ٹراماسینٹرایک سیمی گورنمنٹ ادارہ ہے، ایم ڈی سی نے ٹیسٹ 8 ستمبرکو لینا ہے، کوشش ہے کہ سندھ کے اداروں میں سندھ ڈومیسائل کے بچے داخلہ لیں.

وزیر صحت سندھ نے کہا ہے کہ کچھ معاملات میں قوانین کی تبدیلی درکار ہے، جو فوری نہیں ہوسکتی.

خیال رہے کہ بارش کے بعد کراچی میں مکھیوں کی بہتات ہے، جس سے نبرد آزما ہونے کےلیے ٹھوس اقدامات کا فقدان دکھائی دیتا ہے. اس باعث حکومت کو سخت تنقید کا سامنا ہے.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں