پاناما کامقدمہ سیدھا سیدھا کرپشن کاہے، پیر کو پاکستان میں تبدیلی کا سورج طلوع ہوگا، بابر اعوان -
The news is by your side.

Advertisement

پاناما کامقدمہ سیدھا سیدھا کرپشن کاہے، پیر کو پاکستان میں تبدیلی کا سورج طلوع ہوگا، بابر اعوان

اسلام آباد : تحریک انصاف کے رہنما بابراعوان کا کہنا ہے کہ پاناما کامقدمہ سیدھا سیدھا کرپشن کاہے، کیس میں مدعی پورا پاکستان ہے،آئندہ پیر کو پاکستان میں تبدیلی کاسورج طلوع ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی کے رہنما بابر اعوان نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ پاناماکیس کرپشن کا بین الاقوامی کیس ہے ، ریفرنس کسی زبانی بات کسی اخباری تراشے پر مشتمل نہیں، پاناما کیس میں جو فیصلہ آیا، گاڈ فادر ٹو کے بارے میں ڈکلریشن آگیا، یہ ڈکلریشن شہبازشریف کو نااہل قرار دینے کے لیے کافی ہے۔

بابر اعوان نے کہا کہ پاناماکیس میں مدعی پورا پاکستان ہے، پاناما کا مقدمہ سیدھا سیدھا کرپشن کا ہے، آئندہ پیر کو پاکستان میں تبدیلی کا سورج طلوع ہوگا، 16 مارچ 1999کوہائی کورٹ لندن نےفیصلہ دیا، عباس شریف، محمدشریف اور شہبازشریف پیسے دینے والوں میں شامل تھے، جو پیسے جمع کرائے گئے وہ34ملین ڈالر تھے، اگر کوئی سازش ہوئی تو گاڈفادر 1اور گاڈفادر2 کے درمیان ہوئی، سازش اس ملک کےعوام کے خلاف ہوئی ۔

انھوں نے کہا کہ نااہلی کے آغازکے لیے اسپیکرپنجاب اسمبلی کوریفرنس دائرکیا، اسپیکر پنجاب اسمبلی سے کوئی گلہ نہیں انہوں نے دوبارہ ٹکٹ لینا ہے، اسپیکر پنجاب اسمبلی نے کہا معاملہ ہائی کورٹ میں زیرِسماعت ہے، سپریم کورٹ کے فیصلےکے بعد جے آئی ٹی تشکیل دی گئی۔

تحریک انصاف کے رہنما کا کہنا تھا کہ جے آئی ٹی رپورٹ جلد ایک میں صفحہ 62 سے75تک دوسرا ڈکلریشن ہے، فیصلے کے خلاف شہبازشریف نے مقررہ وقت میں اپیل نہیں کی ، جب جےآئی ٹی پر اعتراضات مسترد ہوئے تو یہ اپیل کرسکتےتھے، مقررہ وقت میں اپیل دائر نہیں ہوئی ،اب جےآئی ٹی اعتراضات دائر نہیں ہوسکتے۔

انکا کہنا تھا کہ کبھی آبپارہ کبھی جی ایچ کیوکی طرف رخ کرکے کہتے ہیں کوئی خفیہ ہاتھ ہے، کوئی خفیہ ہاتھ ہےتو نام تولو، جو بھی ثبوت آئے وہ دیگر ممالک سےآئے، ظفر حجازی کے خلاف پرچے میں 3افراد نے اعتراف جرم کیا، 3 ملازمین نے اعتراف کیا ظفرحجازی نے ٹمپرنگ پر مجبور کیا اور جس نے ظفرحجازی کو ٹمپرنگ پر مجبور کیا اس کے خلاف بھی کارروائی ہونی چاہیے۔

بابر اعوان نے کہا کہ دبئی والوں نے لکھ کر دے دیا، ان کے دعوےدرست نہیں، دبئی کو وزارت خارجہ نے خط لکھا، نمبرلکھ کر دیے، قطری حکام کو خط لکھا،مریم نواز وہاں گئیں، کلیبری فونٹ پر کمپنی نے کہا جنوری 2007میں جاری کیا، یہ سازش بھی ملک میں نہیں باہر ہوئی۔

پی ٹی آئی رہنما کا کہنا تھا کہ ظفرعلی شاہ کیس میں ن لیگ نے کہا اس کیس کو اوون نہیں کرتے، ظفرعلی شاہ کیس فیصلےمیں شہبازشریف کے خلاف پیرے لکھے گئے، اس فیصلے کے خلاف کوئی درخواست دائر نہیں کی گئی، نوازشریف نے ایک نہیں 7این آر او کیے، ایک ظفرعلی شاہ کیس میں ہے۔

بابر اعوان نے کہا کہ سوچنےوالی بات ہے 6ارب روپے کہاں سے دیے گئے، 6ارب روپے دینے کا ریکارڈ گاڈفادر ون یا گاڈفادرٹو نے دینا ہے، ایک ارب 20 کروڑ روپے قرض لیا تھا ، جو بڑھ کر 6ارب ہوگیا، کل 6ارب 46کروڑ روپے کا قرض ادا کرنا تھا، شوگر ملوں کا قرضہ آج تک ادا نہیں کیا گیا۔

انھوں نے مزید کہا کہ طے شدہ ہے دھمکیاں دی گئیں،ریکارڈ ٹمپرنگ کی گئی ، دھمکیاں اداروں کو دی گئی، کہا گیا بچوں پر زمین تنگ کردیں گے، شہبازشریف نے جےآئی ٹی پر سرجیکل اسٹرائیک کی ،اداروں پر بمباری کی، درخواست دی شہبازشریف کی طرف سے فنڈ طریقہ کار کے مطابق جاری ہوں۔

پی ٹی آئی رہنما کا کہنا تھا کہ مودی کے یاروں کے اقتدار کا وقت ختم ہوگیا ہے، ن لیگ کی درخواست زیرالتوا پیش رفت پر جاری ہوسکتی ہے، تاثر سے متعلق درخواست کی کوئی اہمیت نہیں ہوگی، عدالت نے کہا جےآئی ٹی کی رپورٹ پر نئے دلائل ہی سنیں گے، اعتراض صرف جے آئی ٹی کی رپورٹ پر ہی ہوسکتے ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں