The news is by your side.

Advertisement

‘بابر اعظم بہترین کپتان بننے کی مکمل صلاحیت رکھتے ہیں’

جنوبی افریقہ کے خلاف ایک روزہ اور ٹی ٹونٹی کرکٹ سیریزمیں کامیابی پر پاکستان کرکٹ بورڈ ‏کے چیئرمین احسان مانی نے قومی کرکٹ ٹیم کو مبارکباد پیش کی ہے۔

جنوبی افریقہ کے خلاف ایک روزہ انٹرنیشنل سیریز میں 1-2 سے کامیابی کی بدولت آئی سی سی ‏مینز کرکٹ ورلڈکپ سپر لیگ کے پوائنٹس ٹیبل پر دوسری پوزیشن حاصل کرنے والی قومی کرکٹ ‏ٹیم نے میزبان ٹیم کو ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل سیریز میں بھی شکست دے دی. ‏

ٹی ٹونٹی سیریز میں 1-3 سے جیت کی بدولت عالمی ٹی ٹونٹی رینکنگ میں پاکستان کے پوائنٹس ‏کی تعداد 262 ہوگئی ہے۔ رینکنگ میں چوتھے نمبر پر موجود پاکستان اور پہلے نمبر پر موجود ‏انگلینڈ میں اب صرف 10 پوائنٹس کا فرق رہ گیا ہے۔

ون ڈے انٹرنیشنل دوطرفہ سیریز کے دوران پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان بابراعظم نے آئی سی سی ‏ون ڈے انٹرنیشنل پلیئرز رینکنگ میں دو مرتبہ نمبرون بیٹسمین بننے کا اعزاز حاصل کیا۔ اوپنر فخر ‏زمان اور فاسٹ باؤلر شاہین شاہ آفریدی نے بھی اپنے ون ڈے کیرئیر کی بلند ترین رینکنگ حاصل ‏کی۔

ادھر ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل سیریز میں بابراعظم نے نہ صرف اپنے ٹی ٹونٹی کرکٹ کیرئیر کی پہلی ‏سنچری بنائی بلکہ انہوں نے محمد رضوان کے ہمراہ 197 رنز کی ریکارڈ اوپننگ شراکت بھی قائم ‏کی۔ سیریز کے تیسرے میچ میں پاکستان نے 205 رنز کا مجموعہ صرف ایک وکٹ کے نقصان پر 12 ‏گیندیں قبل حاصل کیا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین احسان مانی کا کہنا ہے کہ دورہ جنوبی افریفہ میں شاندار ‏کارکردگی کا مظاہرہ کرنے پر وہ قومی کرکٹ ٹیم کو مبارکباد پیش کرتے ہیں، جنوبی افریقہ اپنے ‏ملک میں کبھی بھی آسان حریف نہیں سمجھا جاتا مگر پاکستان نے متاثرکن کھیل پیش کرتے ہوئے ‏پہلے1-2 سے ایک ون ڈے سیریز اور پھر 1-3 سے ٹی ٹونٹی سیریز جیتی۔

احسان مانی نے کہا کہ آوے سیریز میں فتح بہت اہم ہوتی ہیں، پرامید ہوں کہ اس فتح سے ‏انفرادی طور پر کھلاڑیوں اور مجموعی طور پر ٹیم کے اعتماد میں اضافہ ہوگا، بابراعظم نے اپنی ‏پراعتماد کارکردگی کی بدولت خود کو ایک متاثرکن کپتان ثابت کیا ہے، اکتوبر 2019 میں جب انہیں ‏پہلی مرتبہ قومی وائیٹ بال کرکٹ ٹیم کا کپتان مقرر کیا گیا تھا تو اس فیصلے پر شکوک و شبہات کا ‏اظہار کیا جاتا تھا مگر وہ بورڈ کے اعتماد پر پورا اترے، کوئی شک نہیں ہے کہ وہ اپنی قائدانہ ‏صلاحیتوں کو بہتر بناتے رہیں گے اوران میں پاکستان کا کامیاب ترین کپتان بننے کی قابلیت موجود ‏ہے۔

چیئرمین پی سی بی کا کہنا ہے کہ فخر زمان اور محمد رضوان کی نمایاں کارکردگی نے پاکستان کی ‏ٹاپ آرڈر بیٹنگ لائن اپ کو استحکام دیا ہے، جو بہت خوش آئند ہے۔ انہوں نے کہا کہ مجموعی ‏طور پر جنوبی افریقہ میں ہمارے باؤلرز کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا تاہم سیکھنے کا عمل ہر وقت ‏جاری رہتا ہے، یقین ہے کہ جنوبی افریقہ سے واپسی پر ہمارے باؤلرز ایک بہتر یونٹ بن کر لوٹیں ‏گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ وہ بھرپور محنت کرنے پر مصباح الحق اور ان کی کوچنگ ٹیم کے دیگر ‏ارکان کی بھی تعریف کرنا چاہتے ہیں،جنہوں نے ٹیم کی کارکردگی میں بہتری لانےکے لیے سخت ‏محنت کی ۔

انہوں نے کہا کہ یہ ٹی ٹونٹی ورلڈکپ کا سال ہے، ٹورنامنٹ میں شریک ہر ٹیم صرف جیت کے ‏مقصد کو لے کر ایونٹ میں شرکت کرے گی، لہٰذا ہمیں ابھی مزید محنت کرنی ہے اور مستقبل ‏قریب میں انگلینڈ، ویسٹ انڈیز اور نیوزی لینڈ کے خلاف سیریز میں عمدہ کارکردگی کا تسلسل ‏برقرار رکھنا ہے۔

قومی کرکٹ ٹیم ہفتے کو زمبابوے روانہ ہوگی،جہاں وہ تین ٹی ٹونٹی اور دو ٹیسٹ میچز کھیلے ‏گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں