The news is by your side.

Advertisement

بغداد : کار بم دھماکوں میں ہلاکتوں کی تعداد 93 ہوگئی

بغداد: عراق کے دارالحکومت بغداد میں کار بم دھماکوں میں 93 افراد ہلاک جبکہ 84 زخمی ہوگئے.

تفصیلات کے مطابق بغداد کا دارالحکومت ایک بار پھر دہشتگردی کا نشانہ بنا. بدھ کی صبح پہلا دھماکہ بغداد کے شمالی علاقے صدر سٹی میں بازار میں ہوا، دھماکےکےوقت بازار میں لوگوں کی بھیڑ تھی. دھماکے میں چونسٹھ افراد ہلاک اور ستاسی زخمی ہوئے تھے، ہلاک ہونے والوں میں زیادہ ترتعداد خواتین اور بچوں کی تھی.

عراقی دارلحکومت بغداد پہلے بم دھماکے کے کچھ ہی گھنٹوں بعد دھماکوں کی گونج سے لرز اُٹھا. دوپہر میں ہونےوالے دیگردومزید خود کش کار حملوں میں کاظمیہ اورجامعہ کےعلاقوں میں پولیس چوکیوں کونشانہ بنایاگیا.

بغداد کےضلع کاظمیہ میں شیعہ کمیونٹی کی بڑی تعداد رہائش پذیر ہے جبکہ ضلع جامعہ میں سنی کمیونٹی کی اکثریتی آبادی موجود ہے،خوفناک دھماکوں میں انتیس افراد جان کی بازی ہار گئے تھے.

بغداد میں ہونے والے دھماکوں کی ذمہ داری دہشت گرد تنظیم داعش نے قبول کر لی تھی.

داعش اس سے قبل بھی عراق میں متعدد دھماکے کر چکی ہے جس میں سینکڑوں افراد کی ہلاکتیں ہوئی ہیں۔ عراقی فورسز نے امریکی فورسز کے ساتھ مل کر 2014 میں داعش کے قبضہ کیے جانے والے علاقوں کو تو واپس حاصل کرلیا ہے لیکن تاحال یہ دارالحکومت میں ان کی دہشت گردانہ کارروائیوں کو روکنے میں ناکام ہے۔ مغربی عراق کا بڑا حصہ اب بھی داعش کے قبضے میں ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں