The news is by your side.

Advertisement

بغداد: مزار پر خودکش حملے میں 30 افراد جاں بحق

بغداد: عراق کے دارالحکومت بغداد میں ایک مزار پر خودکش حملے میں 30 افراد جاں بحق جبکہ 50 سے زائد افراد زخمی ہوگئے۔ حملہ کی ذمہ داری داعش نے قبول کرلی۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق افسوسناک واقعہ بغداد کے شمالی علاقے بلاد میں واقع سید محمد مزار پر پیش آیا جہاں خودکش بمبار نے اپنی گاڑی مزار کے مرکزی دروازے سے ٹکرا دی۔ دھماکے کے بعد قریب موجود دیگر دہشت گردوں نے بھی اندھا دھند گولیاں اور مارٹر گولے برسا دیے۔

پالمیرا کے تاریخی کھنڈرات، داعش کے ہاتھوں تباہی سے قبل ، اور بعد میں *

عید کے موقع پر مزار پر زائرین کی بڑی تعداد موجود تھی۔ ذرائع کے مطابق اموات میں اضافے کا خدشہ ہے۔

واضح رہے کہ رواں ہفتہ یہ بغداد میں داعش کی جانب سے کیا جانے والا دوسرا حملہ ہے۔ عید سے 2 روز قبل ایک پرہجوم بازار میں بھی خوفناک بم دھماکہ کیا جاچکا ہے۔ دھماکے میں اب تک 292 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی جاچکی ہے۔

داعش نے 19 یزدی خواتین کو زندہ جلا دیا *

داعش کے خلاف عراق اور شام میں امریکا اور اتحادیوں کی کارروائیاں بھی جاری ہیں۔ ترکی کو اتحاد میں شامل ہونے کے بعد رواں ماہ مختلف دہشت گرد حملوں کا سامنا بھی کرنا پڑ رہا ہے جس میں استنبول کے اتاترک ایئرپورٹ پر 3 خودکش حملے بھی شامل ہیں۔ دہشت گردی کے بدترین واقعہ میں 36 افراد جاں بحق ہو گئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں