The news is by your side.

Advertisement

پاکستانی 18کھرب روپے کے جانورقربان کرنے جارہے ہیں

اسلام آباد: عید الاضحی ایک مذہبی فریضہ ہی نہیں بلکہ بڑی اہم معاشی سرگرمی بھی ہے، اس سال بھی پاکستانی چوہتر لاکھ جانور اللہ کی راہ میں قربان کریں گے.

عیدالاضحی کے موقعے پر ہر سال اربوں روپے ایک طبقے کے ہاتھوں سے نکل کر دوسرے طبقے کے پاس چلے جاتے ہیں، یہ معاشی سرگرمی اگرچہ چند روزہ ہوتی ہے، لیکن اس کے اثرات مہینوں محسوس کیے جاتے ہیں۔

قربانی کے جانور افزائش، ٹرانسپورٹیشن اور خریداری سے لے کر دستر خوان پر سجنے تک، بہت سے ہاتھوں میں سرمایہ منتقل ہوتا ہے۔

رواں سال چوہتر لاکھ سے زیادہ جانور قربان کئے جارہے ہیں، جن میں پچیس لاکھ گائیں ، چالیس لاکھ بکرے، آٹھ لاکھ بھیڑ اور تقریبا چالیس ہزار اونٹ شامل ہیں۔

محتاط اندازے کے مطابق ان جانوروں کی قیمت تقریبا اٹھارہ کھرب روپے بنتی ہے، ان جانوروں سے ملنے والی کھالوں کی قیمت تقریبا ساڑھے چھ ارب روپے بنتی ہے ۔ یہ ہی نہیں موسمی اور اصل قصائی بھی دس ارب روپے سےزائدکی رقم کھال اتارنے کےعوض وصول کر تے ہیں۔

اس دوران چھری چاقو، جانوروں کا چارہ،ٹرانسپورٹ ، مصالحہ جات اور منڈیوں کا انتظام جیسے کاروبار خوب چمکتے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں